دربار مؤ دفاتر30 اکتوبر کو بند | 9 ؍نومبر کو جموں میں کھلیں گے

سرینگر//دربار مؤ کے سلسلے میں ہفتہ میں پانچ دِن کام کرنے والے سرکاری دفاترسرینگر میں30 اکتوبر2020  اور ہفتہ میں6 دن کام کرنے والے سرکاری دفاتر31 اکتوبر کو دفتری اوقات کے بعد سالانہ دربار مؤ کے سلسلے میں بند ہوں گے۔ یہ سبھی دفاتر9؍ نومبر2020 کوجموں میں دوبار ہ کھلیں گے۔حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ جو دفاتر کیمپ کی صورت میں سرینگر سے جموں منتقل ہو رہے ہیں وہ اپنے عملے کا صرف 33فیصد ہی جموں روانہ کریں یا محکمہ کے 10ملازمین کو جموں دربامؤ کے ساتھ روانہ کریں۔حکومت کی جانب سے جاری ایک حکمنامے کے مطابق سبھی محکموں سے کہا گیا ہے کہ وہ ان تاریخوں پر دفتری اوقات کے بعد سارا ریکارڈ پیک کریں ۔ سبھی محکموں سے کہا گیا ہے کہ 23 ؍اکتوبر کو ایک گزیٹیڈ افسر اور4 سے5 نان گزیٹیڈ ملازمین پر مشتمل ایڈوانس پارٹی کو جموں میں ریکارڈ موصول کرنے کے لئے روانہ کریں۔تمام محکمے اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ تمام ریکارڈ مناسب طریقے پر پیک کئے جائیں اور اُن کی چابیاں ایڈوانس پارٹی کے ساتھ جموں بھیجی جائیں ۔ اس سلسلے میں ایس ایس پی سیکورٹی سول سیکرٹریٹ سرینگر سے کہا گیا ہے کہ وہ ان قواعد کی پاسداری نہ کرنے والے محکموں کی فہرست جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ کو بھیجیں ۔ جے اینڈ کے جے کے آر ٹی سی کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ جموں کے ملازمین کو 31 ؍ اکتوبر اور یکم ؍ نومبر 2020 ء کوٹرانسپورٹ سہولیت فراہم کرنے کے لئے اچھی حالت میں معقول تعداد میں بسوں کا انتظام کرے۔اسی طرح سر ی نگر کے ملازمین کے لئے بھی7 اور8 ؍نومبر 2020 ء کو ٹرانسپورٹ سہولیات بہم رکھنے کی ہدایت دی گئی ہے۔محکمہ صحت اور طبی تعلیم سالانہ دربار مؤ (سرمائی زون) کے سلسلے میں جموں منتقل ہونے والے سول سیکرٹریٹ سری نگر کے ان تمام ملازمین کے کووِڈ۔ 19 ریپڈ اینٹی جن ٹیسٹ کے اِنتظامات کرے گا۔ مزید برآں اگرکسی بھی ملازم کوجانچ کے بعداینٹی جن ٹیسٹ مثبت آیاتو وہ جموں میں منفی جانچ کے بعد ہی اپنے فرائض دوبارہ شروع کرے گا۔حکمنامے میں کہا گیا ہے سپیشل مؤ ٹی اے یکساں بنیاد پر25 ہزار روپے فی ملازم ادا کیا جائے گا ۔