خوف و دہشت کا ماحول تشویشناک:کمال

 سرینگر//نوجوانوں کی گرفتاریوں اور لوگوں کو ہراساں و پریشان کرکے خوف و دہشت کا ماحول برپا کرنے کے نہ تھمنے والے سلسلے پر زبردست تشویش اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ آر ایس ایس کی مرکزی سرکار نے پی ڈی پی کے ذریعے کشمیریوں کیخلاف اعلان جنگ کر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وادی بھر سے خصوصاً جنوبی کشمیر اور وسطی کشمیر سے شبانہ چھاپوں، بلا جواز گرفتاریوں، پکڑ دھکڑ اور خوف و ہراس پھیلایا جارہا ہے اور دانشگاہوں میں گھس کر طلباء و طالبات کیخلاف طاقت کا بے تحاشہ استعمال کیا جارہا ہے، جو انتہائی تشویشناک ہے۔ یہ طریقہ کار وادی کو تباہی اور بربادی کی جانب دھکیلنے کے سوا اور کچھ نہیں کرسکتا۔اُن کا کہنا تھا کہ پی ڈی پی بھاجپا حکومت کے ساڑھے 3سال ریاست میں سیاسی ، سیکورٹی اور انتظامی سطح پر بدترین دور ثابت ہوا ہے۔ ڈاکٹر کمال نے کہا کہ اپنی کرسی کو بچانے کیلئے محبوبہ مفتی کو ناگپور اور دلی سے جو بھی فرمان ملتے ہیں موصوفہ ان پر من و عن عمل کررہی ہے۔اُن کا کہنا تھا کہ پی ڈی پی بھاجپا مخلوط حکومت کا مقصد نہ صرف ریاست جموں و کشمیر کی خصوصی پوزیشن کو ختم کرنا ہے بلکہ یہاں کی نوجوان نسل کے مستقبل کو تاریک بنا ہے۔ اسلامک یونیورسٹی سمیت کئی دانشگاہوں میں بے لگام فورسز کی طرف سے کی گئی کارروائی کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ ڈاکٹر کمال نے کہاکہ نوجوان کو گرفتار کرکے بیرونِ وادی تپتی ہوئی گرمی میں جیلوں میں اسیر بنایا جارہاہے۔ بیٹے کے بدلے باپ اور بھائی کے بدلے بھائی کو گرفتار کرکے ان کا زدکوب کرنا اب معمول بن کر رہ گیا ہے۔