خواتین کی قیادت میں ترقی عالمی سطح پر اپنی شناخت بنانی چاہئے:ایرانی

یو این آئی

نئی دہلی// مرکزی خواتین اور بچوں کی ترقی کی وزیر اسمرتی ایرانی نے حکومت کے ’خواتین کی قیادت میں ترقی‘کے منتر سے فائدہ اٹھانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی خواتین کو عالمی سطح پر اپنی شناخت بنانی چاہئے ۔ ایرانی نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں ملک میں ‘خواتین کی قیادت میں ترقی’ کا تصور چل رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ملک کی ترقی کے سفر میں ایک انقلابی تبدیلی ہے ۔ یہ صرف کہنے کی بات نہیں بلکہ حقیقت میں نظر آرہا ہے ۔ ملک نے ہمیشہ خواتین کو فائدہ اٹھانے والوں کے طور پر دیکھا ہے ۔ اب وقت آگیا ہے کہ انہیں ترقی کے شراکت دار کے طور پر دیکھا جائے ۔انہوں نے کہا کہ ’خواتین کو ترقی کے عمل میں حصہ لینے کی ضرورت ہے‘ ۔ ایرانی کل ایک نجی نیوز چینل کے پروگرام ’رائزنگ انڈیا – شی پاور‘سے خطاب کر رہی تھیں۔انہوں نے کہا کہ ملک ایک ایسے دور سے گزر رہا ہے جب وسیع تر مفاد میں بڑی کامیابیاں حاصل کی جا سکتی ہیں۔ یہ موقع ہاتھ سے جانے نہیں دینا چاہئے ۔مرکزی وزیر نے کانگریس کی سابق حکومتوں پر خواتین کی حفاظت اور صفائی جیسے مسائل کو نظر انداز کرنے کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا کہ سال 2010میں یہ واضح ہو چکا تھا کہ صفائی ستھرائی کی کمی سے مجموعی گھریلوپیداوار (جی ڈی پی) متاثر ہو رہی ہے ۔ سیاست دانوں نے کبھی بیت الخلاء بنانے کا نہیں سوچا۔ مودی حکومت نے خواتین کو بیت الخلاء کا فائدہ پہنچایا ہے ۔انہوں نے کہا کہ 2014 سے پہلے لوگ کہتے تھے کہ خواتین کاروبار شروع نہیں کر سکتیں۔ لیکن حکومت کی مدرا اسکیم نے اسے ممکن بنایا ہے ۔ ایرانی نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ خواتین میں ہنر نہیں ہے لیکن انہیں فیصلہ سازی کے عمل میں جگہ نہیں مل رہی تھی۔