خواتین کی سیکورٹی پر کانگریس کی آکروش ریلی

 نئی دہلی//کانگریس کے قومی صدر راہل گاندھی نے پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس شروع ہونے سے پہلے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ کر اسی سیشن میں خواتین ریزرویشن بل پاس کرانے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ کانگریس اس کے لئے انہیں غیر مشروط حمایت دینے کو تیار ہے ۔ مسٹر گاندھی نے وزیر اعظم کو اس سلسلے میں پیر کو لکھا خط ٹوئٹر پر پوسٹ کرکے کہا کہ ہمارے وزیر اعظم کہتے ہیں کہ وہ خواتین کوبااختیار بنانے کے حق میں ہیں۔ وقت آ گیا ہے کہ وہ سیاست سے اوپر اٹھ کر اسے عملی جامہ پہنائیں اور پارلیمنٹ میں خواتین ریزرویشن بل پاس کرائیں۔ کانگریس انہیں غیر مشروط حمایت دے گی۔انہوں نے لکھا ہے کہ راجیہ سبھا نے اس بل کو 9 مارچ 2010 کو منظور کیا تھا لیکن یہ گزشتہ آٹھ برسوں سے کسی نہ کسی بہانے سے لوک سبھا میں اٹکا پڑا ہے ۔ کانگریس صدر نے کہا کہ وزیر اعظم اپنی مختلف ریلیوں میں خواتین کو بااختیار بنانے اور عورتوں کو عوامی زندگی میں اہمیت دینے کے عزم کا اظہار کرتے ہیں۔ اسے پوراکرنے کے لئے اس سے اچھا موقع اور کیا ہو سکتا ہے ۔ لوک سبھا میں بھارتیہ جنتا پارٹی اور اس کے اتحادیوں کی اکثریت ہے اگر وہ اس کی حمایت کرتے ہیں تو یہ بل منظور ہونے سے کوئی نہیں روک سکتا۔اس بل کو منظور کرانے کا مانسون اجلاس سب سے زیادہ مناسب وقت ہے اور اگر یہ اس وقت منظور نہیں ہو سکا تو اسے آئندہ عام انتخابات سے پہلے ریزرویشن کانفاذ نہیں ہو پائے گا۔دریں اثناء خواتین کانگریس نے مودی حکومت پر خواتین کی سیکورٹی کے لئے مثبت قدم اٹھانے اور خواتین سیکورٹی ایکٹ پاس کرانے کے لئے دباو بنانے کے لئے پیر کو   'آکروش ریلی' نکالی اور کہاکہ اگرحکومت اس سمت میں ٹھوس قدم نہیں اٹھاتی ہے تو پورے ملک میں 'جن آکروش ریلی' (عوامی غصہ ریلی) نکالی جائے گی۔ خواتین کانگریس کی صدر سشمیتا دیوی نے ریلی میں شامل ہونے سے پہلے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کہاکہ مودی حکومت خواتین کو سیکورٹی فراہم کرنے میں ناکام رہی ہے اور خواتین ریزرویشن بل لانے کے اپنے وعدے کو بھول گئی ہے ۔ خواتین کی سیکورٹی اور خواتین ریزرویشن پر مودی حکومت کو اس کا وعدہ یاد دلانے کے لئے خواتین کانگریس دہلی کے ساتھ ساتھ پورے ملک میں آکروش ریلی نکالے گی۔