خواتین کارکنان کے اقرباء اور والدین کی تنگ طلبی ناقابل برداشت: دختران ملت

سرینگر//دختران ملت نے تنظیم سے وابستہ خواتین کے والدین اور اقرباء کو جنوبی کشمیر میں پولیس تھانوں پر طلب کرنے کی مذمت کی ہے۔ تنظیم کی ترجمان رفعت فاطمہ کے مطابق پچھلے کئی دنوں سے اسلام آباد پولیس دختران ملت ممبران اور خیر خواہوں کے اقرباء کو تھانوں میں بلا کر تنگ کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ان لڑکیوں پر دباو بنانے کی ایک کوشش ہے۔انہوں نے کہا کہ ان ہتھکنڈوں سے اُن کے حوصلے پست نہیںہونگے۔انہوں نے مزید کہا کہ باپردہ خواتین کو تھانوں پر طلب کرنا محض پولیس کی بوکھلاہٹ ہے۔ترجمان نے کہا کہ لڑکیوں کی تھانوں پر طلبی کو ہرگز برداشت نہیںکہا جائے گا اور نہ ہی ان ہتھکنڈوں سے ہمارے عزم کو توڑا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ صدر پولیس سٹیشن اسلام آباد میں دوبچیوں تنفیع رسول اور سمیرا رسول کو پولیس ریمانڈ میں نظربند رکھا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ دختران ملت کو پچھلے ڈیڑھ ماہ سے نشانہ بنایا جارہا ہے۔