خط و کتابت میں برہان کا نام نہ لکھیں

 دلی//بھارت کی وزارت داخلہ نے تمام افسران اور سیکورٹی ایجنسیوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ تحریری رابطے کے دوران حزب کمانڈر برہان وانی کا نام نہ لکھیں۔ انڈین ایکسپریس نے وزارت داخلہ کے ایک سینئر افسر کا حوالہ دیکر لکھاہے ’’ مستقبل میں تمام رابطوں کے دوران برہان وانی کا نام لکھنے کے بجائے’’  8جولائی کو مارے گئے تین جنگجو ‘‘  لکھا جائے ۔رپوٹ میں لکھا گیا ہے کہ یہ زیادہ محفوظ رہے گا کیونکہ حکومت وعدہ بند نہیں ہے بلکہ اگر بعد میں جنگجوئوںکا نام اور تنظیم کا نام غلط بھی ثابت ہوتا ہے۔ وزارت داخلہ کا یہ قدم برہان وانی کی وادی اور اقوام متحدہ سمیت دیگر بین اقوامی اداروں میں شہرت کو دیکھ کر اٹھایا گیاہے۔ وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ 8جولائی 2016کو برہان وانی کی ہلاکت کے بعد پیدا ہوئی صورتحال کے نتیجے میں 88مقامی نوجوانوں نے بندوق اٹھائی ہے۔ افسر نے بتایا کہ وازات داخلہ نے تمام افسران کو ہدایت دی ہے کہ وہ پارلیمنٹ میں لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے سوالات کا جواب لکھنے ہوئے برہان وانی کا نام نہ لکھیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ انہیں ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سرکاری دستاویزات میں حز ب المجاہدین کا نام بھی نہ لکھے ، چاہئے وہ حق اطلاعات کے تحت دائر کی گئی درخواست کا جواب ہی کیوں نہ ہو۔ وزارت داخلہ نے تمام سیکورٹی ایجنسیوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ بر ہان وانی کی پہلی برسی پر ہوشیار رہیں۔