خطہ چناب میں بے روزگاری سب سے بڑا مسئلہ: اجیت بھگت

کشتواڑ// خطہ چناب کے تمام اضلاع کشتواڑ،ڈوڈہ اور رام بن اضلاع کے بے روزگار نوجوانوں میں بڑھتی ہوئی بیروزگاری ایک بڑا مسئلہ بن گیا ہے۔سینئر سماجی کارکن اور ممتازسیاسی رہنما اجیت بھگت نے واضح طورپر کہا ہے کہ وادی چناب کے تعلیم یافتہ نوجوانوں میں بیروزگاری کا مسئلہ گزشتہ برسوں کے دوران بد سے بدتر ہو گیا ہے جس کی طرف اعلیٰ افسران کی توجہ ترجیحی بنیادوں پر کرنے کی ضرورت ہے۔بھگت نے کہا ہے کہ یہ دیکھا گیا ہے کہ افکان انفراسٹرکچر لمیٹڈ، پٹیل انجینئرنگ لمیٹڈ، جے پرکاش (جے پی) ایسوسی ایٹڈ اور ایل اینڈ ٹی کمپنیوں کی انتظامیہ صرف ان نوجوانوں کو ملازمت فراہم کر رہی ہے جو سیاسی پارٹی کے قریب ہوتے ہیں اور اس امتیاز نے سینکڑوں نوجوانوں کو چھوڑ دیا ہے۔بھگت نے جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے اپیل کی کہ وہ ان پڑھے لکھے بے روزگار نوجوانوں کو بچانے کے لیے آئیں جو بہتر ملازمتوں کی تلاش میں پوسٹ کرنے کے لیے بھاگ رہے ہیں۔اجیت بھگت نے تمام ہائیڈرو الیکٹرک پاور پروجیکٹوں کی انتظامیہ پر زور دیا ہے کہ وہ چناب ویلی کشتواڑ/ڈوڈہ اور رام بن اضلاع کے مستحق بے روزگار نوجوانوں کو بغیر کسی سیاسی نقطہ نظر کے روزگار کے مواقع فراہم کریں۔اجیت بھگت نے جموں و کشمیر یونین ٹیریٹری کے لیفٹیننٹ گورنر سے پراجیکٹ کے تعطل کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا اور مزید مطالبہ کیا کہ ہزاروں میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کی کافی صلاحیت والے کاوار، ریٹل اور کارتھی ہائیڈرو الیکٹرک پروجیکٹوں کے جلد آغاز پر زور دیا جائے۔ آنے والے وقتوں میں جو یقینی طور پر ملک کی معیشت کو فروغ دے سکتا ہے۔