خشک سالی کا جمود ٹوٹنے کا امکان

سرینگر// طویل خشک سالی سے وادی کے لوگوں کو تھوڑی سی راحت ملنے کا امکان ہے کیونکہ محکمہ موسمیات نے14یا15نومبر کو  بارشیں ہونے کا امکان ظاہر کیا ہے۔محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ 14اور 15نومبر کو وادی میں طویل خشک سالی کا جمود ٹوٹنے والا ہے۔تاہم محکمہ موسمیات نئی دہلی کی طرف سے جاری کی گئی جانکاری کے مطابق 12اور13نومبر کو دور دور تک بارشیں ہوسکتی ہیں جو زیادہ سے زیادہ 25ملی میٹر تک ہونگی جبکہ 14اور 15نومبر کو میدانی علاقوں میں معمولی بارشیں ہونگی جو زیادہ سے زیادہ26سے 50ملی میٹر تک ہونے کا امکان ہے۔اسکے علاوہ16نومبر کو بھی معمولی بارشیں ہونے کا امکان ہے تاہم17نومبر کو اچھی خاصی بارشوں کی پیش گوئی کی گئی ہے۔یہ بھی بتایا گیا ہے کہ 14نومبر سے آسمان ابر آلود رہے گا البتہ 18نومبر کو آسمان صاف ہونا شروع ہوگا۔ادھرسونم لوٹس نے کہا کہ کچھ روز سے رات کے درجہ حرارت میں تھوڑی سی بہتری واقع ہوئی ہے کیونکہ ہمالیا کے شمالی حصے میں برفباری ہوئی ہے اور اگلے دو روز کے بعد شمالی ہندوستان میں دھند سے بھی راحت ملے گا۔انہوں نے کہاکہ2007میں اکتوبر،نومبراوردسمبرکے دوران کوئی بارش یابرف باری نہیں ہوئی تھی جبکہ 2016میں لگ بھگ 5ماہ تک خشک موسمی صورتحال رہی۔سونم لوٹس نے کہاکہ15اکتوبرکوگلمرگ کے بالائی علاقوں میں معمولی سی برف باری ہوئی تھی۔تاہم انہوں نے کہا کہ خشک موسمی صورتحال کاتسلسل کوئی اچھی بات نہیں ہے کیونکہ یہ موسمیاتی بدلائوکی جانب اشارہ کرتاہے ۔