خانقاہ معلی میں عرس تقاریب

سرینگر// حضرت شیخ نجم الدین احمدؒکے 823ویں سالانہ عرس کے سلسلے میں خانقاہِ معلی میں ایک مجلس کا انعقاد ہوا جس میں ختمات المعظمات، درودو اذکار اور اوراد خوانی کی مجلس آراستہ ہوئی۔ تقریب کی پیشوائی غلام محمد ہمدانی نے کی۔اس دوران حضرت شیخ بابا علی والیؒ کا 442واں عرس بھی نہایت عقیدت کے ساتھ منایا گیا ۔اس سلسلے میں اُن کے آستان عالیہ واقع درصحن خانقاہ معلی قرآن خوانی ، ختمات المعظمات ، درودو اذکار اور اورادخوانی کی روح پرور مجلس کا انعقاد ہوا ۔اس موقع پر حضرت شیخ بابا علی والیؒ کی سیرت اورحضرت شاہ ہمدانؒ کے مشن کی آبیاری، جو انہوں نے اپنی زندگی میں انجام دی پر روشنی ڈالی گئی۔ ادھر جمعیت ہمدانیہ کے سربراہ مولانا ریاض احمد ہمدانی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اسلام کی تبلیغ و اشاعت کی خاطر حضرت شیخ نجم الدینؒ نے جام شہادت بھی نوش کیا۔انہوں نے کہاکہ اہل کشمیر کو اس بات پر فخر ہے کہ بانی اسلام حضرت امیر کبیر میر سید علی ہمدانیؒ سلسلہ کبروی تھے۔انہوں نے کہا کہ حضرت شیخ بابا علی والیؒ نے وادی میں تبلیغ واشاعت اسلام کیلئے جو تاریخ ساز خدمات انجام دی ہیں وہ ناقابل فراموش ہیں۔ ادھر  مولانا شوکت حسین کینگ اور مولانا خورشید احمد قانگو نے بھی تقاریب پر دونوں بزرگانِ دین کے علمی اور روحانی کمالات پر روشنی ڈالی۔