حکومت کا 2 اکتوبر سے ’بیک ٹو ولیج‘تیسرے مرحلے کا اعلان | عوامی اہمیت کے حامل اس پروگرام کو لوگوں نے قدرومنزلت کی نگاہ سے دیکھا: کنسل

محکمہ دیہی ترقی و پنچائتی راج کی سیکرٹری شیتل نندا اور ناظمِ اطلاعات و رابطہ عامہ ڈاکٹر سحرش اصغر تھیں ۔ بیک ٹو ولیج پروگرام کے پہلے دو مرحلوں کو ایک بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے شری کنسل نے کہا کہ یہ ایک ایسا پروگرام ہے جس کا عوام کی جانب سے کافی اچھا ردِ عمل سامنے آیا ہے ۔ اس پروگرام کے دوران جموں کشمیر انتظامیہ سے وابستہ چار ہزار گزٹیڈ افسروں نے جموں کشمیر کی ہر پنچائت کا دورہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ عوامی اہمیت کے حامل اس پروگرام کو عوام نے قدر و منزلت کی نگاہ سے دیکھا ہے اور اسی لئے انتظامیہ نے پروگرام کے مرحلہ سوم کو 2 اکتوبر سے شروع کرنے کا فیصلہ لیا ہے جو 12 اکتوبر تک جاری رہے گا ۔ بیک ٹو ولیج پروگرام کا مرحلہ اول ایک تعریفی پروگرام تھا جس کے دوران عوامی شکایات اور مانگوں سے متعلق جانکاری حاصل کی گئی ۔ جبکہ پروگرام کے مرحلہ دوم کے دوران پنچائتوں کو اختیارات تفویض کرنے پر توجہ مرکوز کی گئی اور ان پنچائتوں کے کام کاج ، شکایات و مانگوں سے متعلق جانکاری حاصل کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ پروگرام کا تیسرا مرحلہ عوامی شکایات کے ازالہ کیلئے وقف کیا گیا ہے ۔ شری کنسل نے کہا کہ اس بار انتظامیہ نے 3 ہفتہ قبل ’بیک ٹو ولیج‘ جن ابھیان منعقد کرنے کا فیصلہ لیا ہے جو دس ستمبر سے شروع ہو کر 20 ستمبر کو اختتام پذیر ہو گا ۔ اس پروگرام کے 3 اجزاء ہوں گے ۔ یہ 3 اجزاء عوامی شکایات کا ازالہ ( جن سنوائی ) عوامی خدمات کی فراہمی ( ادھیکار ابھیان ) اور گرام پنچائت سطح پر ترقی کی فراہمی ( اُنت گرام ابھیان ) ہے ۔ قبل از بیک ٹو ولیج مرحلہ سوم پروگرام سے متعلق جانکاری دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یومیہ بلاک تین متواتر ہفتوں کیلئے متعین مقامات یا بلاک ہیڈ کوارٹروں پر ہر بدھوار کو متعلقہ افسران کے اشتراک سے منعقد ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس مدت کے دوران عوامی شکایات سُنیں جائیں گی اور موقعہ پر ہی یا اگلے ہفتے یا اس سے اگلے ہفتے اُن کا ازالہ کرنے کی کوشش کی جائے گی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ زیادہ سے زیادہ عوامی شکایات کو موقعہ پر نمٹانے کی کوشش کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اس مدت کے دوران متعلقہ ڈپٹی کمشنر اور سُپرانٹنڈنٹ  پولیس ہر روز بغیر بدھوار اور ایتوار کو اپنے دفاتر میں صبح 10 بجے سے 11 بجکر 30 منٹ تک دستیاب رہیں گے جبکہ ڈویژنل کمشنرصبح 10 سے دن کے 11 بجکر 30 منٹ تک ہر منگلوار اور جمعرات کو اپنے دفاتر میں دستیاب رہیں گے ۔ انہوں نے کہا تا ہم یومیہ بلاک کے دوران جو کہ بدھوار کو منعقد ہو گا تمام ڈی سی اور ایس پی ہر بلاک کا دورہ تین ہفتوں کی مدت کے دوران کریں گے ۔ متعلقہ حکام ان20 دن تک شکایات کا ازالہ کریں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تمام ڈی سی 55 سکیموں کی صد فیصد عمل آوری کو یقینی بنانے کیلئے کوشش کریں گے ۔ قبل ازبیک ٹو ولیج پروگرام  کے تیسرے جُز اُنت گرام ابھیان سے متعلق جانکاری دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس دوران ترقیاتی عمل کے بارے میں بات کرنے کے بجائے حقیقی طور ترقیاتی کام کئے جائیں گے اور بیک ٹو ولیج مرحلہ اول اور بیک ٹو ولیج مرحلہ دوم کی اہم مانگوں کا تجزیہ کیا جائے گا اور یہ بھی جانکاری حاصل کی جائے گی کہ گذشتہ دو مرحلوں کے کاموں کی عمل آوری اور اُن کی تکمیل بیک ٹو ولیج پروگرام کے مرحلہ سوم سے قبل ہی یقینی بنائی جائے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کاموں کیلئے رقومات پہلے ہی ڈپٹی کمشنروں کے حق میں واگذار کی گئی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ عوامی شکایات اور ترقیاتی مسائل کا ازالہ کرنے کا دور ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ انچارج افسران انتظامی سیکرٹری ہوں گے جو متعین اضلاع کا دورہ کر کے بیک ٹو ولیج مرحلہ اول اور دوم کے تحت ہاتھ میں لئے گئے ترقیاتی کاموں سے متعلق جانکاری حاصل کریں گے ۔  جن ابھیان 20 ستمبر کو اختتام پذیر ہو گا اور بیک ٹو ولیج پروگرام مرحلہ سوم دو اکتوبر سے شروع ہو کر 12 اکتوبر کو اختتام پذیر ہو گا ۔ اس دوران تمام کاموں کا تجزیہ کیا جائے گا ۔ اس نوعیت سے مرحلہ سوم ایک عملی پروگرام ہو گا اور حکومت بیک ٹو ولیج مرحلہ اول اور دوم کے دوران درج کی گئی عوامی شکایات کا ازالہ اور مانگوں کو پورا کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں پورا اعتماد ہے کہ اگلے ماہ عوامی شکایات کے ازالہ ، عوامی خدمات کی فراہمی اور گرام پنچائت سطح پر ترقیاتی عمل کی عملی فراہمی کے میلے ہوں گے ۔