حکومت سے چیمبر آف کامرس جموں کے مطالبات تسلیم کرنے کی گذارش

لداخ یوٹی کی طرح جموں وکشمیر کے حقوق کا بھی یکساں تحفظ کیاجائے :اعجاز کاظمی
جموں//اپنی ٹریڈ یونین نے حکومت سے گذارش کی ہے کہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز جموں کے مطالبات کو تسلیم کیاجائے اور اُن کمپنیوں پر روک لگائی جائے جن سے جموں اور کشمیر کے تاجر طبقہ کو نقصان پہنچے کا احتمال ہے۔ وہ پارٹی دفتر گاندھی نگر میں صوبائی صدر راج کمار شرما کے زیر اہتمام منعقدہ ایک پروگرام سے خطاب کر رہے تھے ۔ اعجاز کاظمی نے کہاکہ حکومت کو چاہئے کہ تاجرطبقہ کے مطالبات تسلیم کئے جائیں اور جموں میں ریلائنس سٹورز کھولنے کی اجازت نہ دی جائے جس سے تھوک اور پرچون کاروبار یوں کو نقصان پہنچے گا۔ انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر میں لوگوں کی روزی روٹی کا انحصار سرکاری ملازمتوں، سیاحت اور چھوٹے کاروبار پر ہے، یہاں پر لوگ اتنے امیر نہیں کہ وہ ممبئی، دہلی، پنجاب یا ملک کی دیگر ریاستوں کے تاجروں کے ساتھ مقابلہ کرسکیں۔انہوں نے کہاکہ ریلائنس اسٹور کھولنے سے مقامی کاروباریوں کو سنگین خطرہ لاحق ہے جس کی وجہ سے وہ سراپا احتجاج ہیں، اِس صورتحال کو ختم کرنے کے لئے جموں وکشمیر میں تاجر طبقہ کے مفادات کا تحفظ کیاجانا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ لداخ یوٹی کی طرز پر جموں وکشمیر میں بھی مقامی لوگوں کے مفادات کا تحفظ کیاجائے۔ اس موقع پر سابقہ ایم ایل اے فقیر ناتھ نے کہاکہ جموں کے ساتھ کسی قسم کا امتیازی سلوک بردداشت نہیں کیاجائے گا۔ انہوں نے کہاکہ ماضی میں لوگ کی گئی نا انصافیوں پر خاموش رہے لیکن اب صبر کا پیمانہ لبریز ہوتا جارہاہے، اپنے حقوق پر غیر مقامی افراد کے ہاتھوں ڈاکہ زنی کرنی کی اجازت نہیں ہوگی۔