حکومتی کمیٹی اور ملازمین انجمنوں میں معاہدہ طے، ہڑتال ختم

سرینگر// بجلی ملازمین و انجینئروں نے پاور گرڈ کارپوریشن آف انڈیا کے ساتھ محکمہ بجلی کے مجوزہ انضمام کو روکنے کی انتظامیہ کی طرف سے تحریری یقین دہانی کے بعد اپنی ہڑتال ختم کر دی ہے۔ صوبائی کمشنر جموں راگھو لنگر اور ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل پولیس مکیش سنگھ کی قیادت میں سرکاری ٹیم نے پیر اورمنگل کی درمیانی رات محکمہ بجلی ملازمین کی انجمن پائو ایمپلائز و انجینئرس کارڈی نیشن کمیٹی کے جنرل سکریٹری ایس ٹکو کی سربراہی میں تشکیل شدہ کمیٹی کیساتھ بات چیت کی اور انہیں انتظامیہ کی جانب سے تحریری یقین دہانی کرائی۔ ملازمین اتحادنے کہا کہ حکومت نے پاور ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے پائور گریڈ کارپوریشن آف انڈیا کے ساتھ انضمام کو روکنے پر اتفاق کیا اور دوبارہ جائزہ لینے کے لیے کمیٹی قائم کی۔احتجاج کرنے والے ملازمین کو انتظامیہ کی جانب سے تنخواہوں سمیت دیگر مسائل پر بھی یقین دہانی کرائی گئی۔ کارپوریشن میں ڈیپوٹیشن پر جانے والے سبھی ملازمین کی نوکری کی ضمانت دی گئی ہے اور وقت پر تنخواہ کی فراہمی بھی یقینی بنائے جائے گی۔  حکومت کیساتھ تحریری معاہدہ ہونے کے فوراً بعد دوران شب ہی ملازمین نے ہڑتال ختم کر دی اور وہ منگل کوڈیوٹیوں پر حاضر ہوئے۔ تین روز تک مسلسل احتجاج کے دوران جموں میں برقی رو کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے فوج اور پولیس کو طلب کرلیا گیا جبکہ جموں میں قریب 500میگاواٹ کی ترسیل متاثر ہوئی اور وادی میں 200میگاواٹ کی فراہمی پر اثر پڑا۔