حد بندی کمیشن کو تمام اضلاع سے اطلاعات درکار

جموں //جموں وکشمیر کے چیف الیکٹورل افسر ہردیش کمار نے کہاہے کہ وہ حد بندی کمیشن کودرکاراطلاعات جمع کرہے ہیں ۔ انہوں نے بتایاکہ حد بندی کمیشن کی طرف سے تحصیلوں، پٹوارحلقوں اور انتظامی یونٹوں کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔ مارچ 2020کو قائم ہونے والے حد بندی کمیشن کے ممبران نے ابھی تک جموں وکشمیر کادورہ نہیں کیا تاہم ان کی طرف سے اضلاع سے تفصیلات طلب کی جارہی ہیں ۔چیف الیکٹورل افسر ہردیش کمار کے مطابق ’’ہم نے جموں وکشمیر کے اضلاع سے موجودہ تحصیلوں، پٹوار حلقوں اور انتظامی یونٹوں کے بارے میں تفصیلات جمع کی ہیں‘‘۔انہوں نے بتایاکہ کمیشن نے ابھی جموں وکشمیر کا دورہ نہیں کیا لیکن ان سے تفصیلات مانگی گئی ہیں جنہیں اضلاع سے حاصل کرنے کے بعدجمع کیاجارہاہے ۔انہوں نے بتایاکہ یہ اطلاعات 15دنوں کے اندر کمیشن کو بھیجی جائیں گی ۔ہردیش کمار نے بتایاکہ اس ڈیٹا میں 2011مردم شماری ، نقشہ جات اور اعدادوشمار شامل ہیں ۔قابل ذکر ہے کہ سپریم کورٹ کی سابق جج رنجنا پرکاش دیسائی کی قیادت میں جموں وکشمیر میںاسمبلی و لوک سبھا حلقوں کی حد بندی کیلئے ایک سال کیلئے کمیشن بنایاگیاہے جس کی مدت مارچ2021تک ہے۔دلچسپ امر ہے کہ نیشنل کانفرنس کے تینوں ممبران پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ ، ریٹائرڈ جج حسنین مسعودی اور محمد اکبر لون نے اس کمیشن کا بائیکاٹ کیاہے ۔تاہم بھاجپا کے جموں کے دو حلقوں سے ممبران پارلیمنٹ ڈاکٹر جتیندر سنگھ اور جگل کشور شرما اس کمیشن کا حصہ رہیں گے ۔