حد بندی کمیشن جموں پہنچ گیا | آج جموں اور کل وادی میںملاقاتیں طے

 سرینگر //حد بندی کمیشن کی ٹیم ریٹائرڈ جسٹس رنجنا پرکاش دیسائی کی سربراہی میں اتوار سہ پہر جموں پہنچ گئی ۔ٹیم پیر  4اپریل کو جموں میں اُن افراد کیساتھ بات کرے گی اور ان کے اعتراضات پر غور کرے گی جنہوںنے جموں ڈویژن میں مسودہ پر اعتراض اُٹھائے تھے اور اپنی تجاویزپیش کی تھیں۔ اسی طرح ٹیم جس میں چیف الیکٹورل آفیسر اور کمیشن کے دیگر ممبران بھی شامل ہیں، منگل  5اپریل کو وادی کا دورہ کرے گا اور یہاں ایس کے آئی سی سی میں عوامی میٹنگ میں ان افراد سے ملے گی، جنہوں نے کمیشن کے مسودہ پر کشمیر ڈویژن سے متعلق اپنے اعتراضات پیش کئے ہیںیا تجاویز دی ہیں۔کمیشن نے اس سے قبل 14 سے 21 مارچ تک رپورٹ کے مسودے پر اعتراضات اور تجاویز طلب کر لی تھیں۔ کمیشن کو کل 409 اعتراضات اور تجاویز موصول ہوئیں۔جموں ڈویژن کے دس اضلاع کے لیے 4 اپریل کو جموں کنونشن سینٹر میں صبح 10 بجے سے دوپہر 12 بجے تک کٹھوعہ، ادھم پور، ڈوڈہ، رام بن، کشتواڑ، راجوری اور پونچھ کیلئے دوپہر 12.30 سے 2.30 بجے تک کمیشن کی ٹیم کو اعتراضات وصول کریگا۔  5 اپریل کو  ایس کے آئی سی سی میں کمیشن کی ٹیم وہاں کے دس اضلاع سے موصول ہونے والے اعتراضات اور تجاویز وصول کریگا۔