حاملہ خاتون کی کچن میں گلا کٹی لاش برآمد

بانہال // بانہال کے درشی پورہ علاقے میں جمعرات کی صبح ایک حاملہ خاتون کی گلا کٹی لاش پر اسرار حالت میں گھر کے کچن سے برآمد کی گئی ہے اور پولیس نے دفعہ 302 انڈین پینل کوڈ کے تحت قتل کا مقدمہ درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی ہے۔ مہلوک خاتون کی شناخت 36 سالہ زبیدہ بیگم زوجہ محمد سلیم کمہار ساکنہ درشی پورہ بانہال کے طور کی گئی ہے۔مہلوک خاتون تین بچوں کی ماں تھی اور چوتھے بچے کی ماں بننے والی تھی۔مہلوک خاتون زبیدہ بیگم کے شوہر محمد سلیم کمہارکا کہنا ہے کہ وہ سب مکان کے ایک کمرے میں سوئے تھے اور رات دو تین بجے کے آس پاس اس نے اپنی اہلیہ کو کمرے میں نہ پایا۔انہوں نے کہا کہ باتھ روم میں تلاش کرنے کے بعد گھر کے کچن میں اس کی گلا کٹی لاش ملی اور بچوں میں خوف و دہشت پیدا نہ ہونے کے ڈر سے انہوں نے جمعرات کی صبح تک یہ معاملہ کسی کو نہیں بتایا اور اہلیہ کے خون آلودہ کپڑے بھی تبدیل کر ڈالے۔ محمد سلیم کا کہنا ہے کہ جب وہ کچن میں پہنچاتو اس کی بیوی دم توڑ چکی تھی ۔ انہوں نے بتایا کہ اس کی اہلیہ ذہنی پریشانی میں رہتی تھی اور اس نے خود کشی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کل ہی ڈاکٹر کے پاس چیک اپ کیا تھا اور الٹراساؤنڈ کرایا تھا۔ مہلوک زبیدہ بیگم کے بھائی نے بتایا کہ وہ اسے نو سال پہلے بھی حمل کے دوران اسے کچھ ذہنی تکلیف تھی اور اس کیلئے ڈاکٹروں اور پیروں فقیروں سے بھی رجوع کیا گیا تھا۔ اطلاع ملتے ہی ایس ڈی پی او بانہال آشیش گپتا اور ایس ایچ او بانہال نعیم الحق موقع پہنچے اورلاش کو پولیس تحویل میں لیکر دفعہ 302 رنبیر پینل کوڈ کے تحت قتل کا مقدمہ درج کرکے اس معاملے کی مختلف زاویوں سے شروع کر دی ہے تاہم ابھی تک کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی یے۔ ایس ایچ او بانہال نعیم الحق نے بتایا کہ معاملہ پراسرار اور پولیس نے ایف آئی آر نمبر 171 /2021 زیر دفعہ 302 انڈین پینل کوڈ درج کی گئی ہے اور معاملے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ موقع پر ثبوتوں کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی گئی ہے تاہم وہاں خون آلودہ کپڑے اور دیگر سامان کی ضبطی عمل میں لائی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجسٹریٹ کی موجودگی میں جمعرات کی دوپہر بعد سب ڈسٹرکٹ ہسپتال بانہال میں لاش کا پوسٹ مارٹم کیا گیا اور لاش کو ورثاء کے سپرد کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ میت سے حاصل کئے گئے نمونے فورنسک لیبارٹری کو بھیجے جارہے ہیں اور نتائج کا انتظار کیاجائے گا۔ مبینہ قتل کی اس لرزہ خیز واقع کو لیکر کئی چہ میگوئیاں بھی ہوتی رہی ہیں اور کچھ لوگ اسے قتل اور کچھ اسے بھوت پریت کے زیر اثر خودکشی کا معاملہ قرار دیتے ہیں۔ ہسپتال میں سہ پہر تک مشغول رہنے کے بعدپولیس نے قاتل کا سراغ لگانے کیلئے تحقیقات شروع کر دی اور موقع واردات کی دربارہ سے باریک بینی سے تحقیقات شروع کر دی گئی ہے۔ ابھی تک پولیس نے مہلوک خاتون کے شوہر محمد سلیم کمہار سے بھی باضابط پوچھ تاچھ نہیں کی ہے اور امید ہے کہ خاتون کی تجہیز وتکفین کے بعد پولیس تحقیقات میں تیزی آئے گی۔