حادثات اور ٹریفک جام سے پاک قومی شاہراہ اولین ترجیح: ڈی آئی جی ٹریفک چارج سنبھالنے کے بعد شریدھر پاٹل کا قومی شاہراہ کا پہلا دورہ ،تعمیراتی کام کا لیا جائزہ

نیوز ڈیسک

جموں//سرینگر جموںقومی شاہرہ پرحادثات اور ٹریفک جام سے پاک ٹریفک ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے ۔ان باتوں کا اظہار ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس ٹریفک جموںشریدھر پاٹل نے چارج سنبھالنے کے بعد قومی شاہراہ کا پہلا دورہ کیا۔تفصیلات کے مطابق، اس دوران ان کے ساتھ ایس ایس پی ٹریفک موہتا شرما نے افسر کے ساتھ ناشری سے بانہال تک کے دورے کے دوران افسران کو قومی شاہراہ کی حالت، قومی شاہراہ پر بلیک سپاٹس اور رکاوٹوں کے بارے میں جانکاری دی ہے۔ انہوں نے افسر کو ٹریفک پولیس کے افسران اور اہلکاروں کو درپیش زمینی مشکلات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔افسر نے خود لینڈ سلائیڈ اور دلواس، مہاڑ، پنتھیال اور شیربی بی سمیت شاہراہ کے پتھروں کے شکار علاقوں کا دورہ کرکے زمینی صورتحال کا جائزہ لیا۔ڈی آئی جی نے تعینات افرادی قوت کو زمینی فرائض کی انجام دہی کے دوران پختہ اور شائستہ رہنے کے بارے میں بتایا۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نے پروجیکٹ ڈائریکٹر قومی شاہراہ کے ساتھ ایک انٹرایکٹو سیشن کا انعقاد کیا اور قومی شاہراہ کی حالت کو بہتر بنانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔بعد ازاں افسر نے ٹریفک پولیس دفتر رام بن میں شاہراہ پر تعینات ڈی ایس پی کے ساتھ میٹنگ کی اور انہیں شاہراہ پر فرائض کی انجام دہی کے دوران ضابطوں کے ساتھ نفاذ کے بارے میں آگاہ کیا۔پاٹل نے قومی شاہراہ کو حادثات سے پاک کرنے پر زور دیا اور افسران کو ہدایت دی کہ وہ اوور ٹیک کرتے ہوئے ٹریفک کی آزادانہ روانی میں رکاوٹ ڈالنے والی گاڑیوں کے چالان کرکے ہائی وے کو بھیڑ سے پاک بنائیں۔ انہوں نے اوور لوڈنگ، اوور سپیڈنگ اور نشے میں ڈرائیونگ کے خلاف بھی کارروائی پر زور دیا۔موٹر وہیکل انکم ڈپٹی انسپکٹر جنرل نے افسران کو ٹیکنالوجی کے استعمال، ای چالان اور سسٹم کو کیش لیس بنانے کے بارے میں بریفنگ دی۔غلط معلومات کے پھیلاؤ پر نظر رکھنے کے لیے افسر نے معلومات کے اشتراک کے لیے سرکاری چینلز کے استعمال پر زور دیا۔ڈی آئی جی ٹریفک نے بتایا کہ ہماری اولین ترجیح ہے کہ ٹریفک حادثات اور ٹریفک سے پاک شاہراہ پر سفر کرنے والے لوگوں کی حفاظت اور حفاظت ہو اور ہم اس کے لیے کام کریں گے۔افسر نے دلواس، مہر، پنتھیال اور شلگری وغیرہ کے مشکل علاقوں میں فرائض انجام دینے والے جوانوں کی کوششوں کی تعریف کی اور ان کے اخلاق کو بلند کرنے کے لیے ان کے حق میں انعامات کی منظوری دی۔

مرمتی کام کیلئے ایک دن بند رہنے کے بعد
جموں سرینگر قومی شاہراہ پر آمد ورفت بلا حلل جاری
بانہال// وادی کشمیر کو ملک کے باقی حصوں کے ساتھ جوڑنی والی سری نگر- جموں قومی شاہراہ ہفتے کی صبح ایک دن بعد ٹریفک کی نقل و حمل کے لئے کھول دی گئی۔ٹریفک حکام نے بتایا کہ قومی شاہراہ پر دنوں طرف ٹریفک کی نقل و حمل جاری ہے۔انہوں نے کہا تاہم مہر – شال گری پر رک رک کر چٹانیں کھسک آنے سے ٹریفک کی نقل و حمل سست ہے۔بتادیں کہ قومی شاہراہ پر جمعے کے روز ٹریفک کی نقل و حمل مرمتی کام کی وجہ سے بند تھیٹریفک پولیس نے اس ضمن میں پہلے ہی ایک بیان جاری کیا تھا جس کے مطابق قومی شاہراہ مرمتی کام کے پیش نظر 3 اور10 مارچ کو بھی ٹریفک کے لئے بند رہے گی۔اہلیان وادی کے لئے شہ رگ کی حیثیت رکھنے والی یہ قومی شاہراہ موسم سرما کے دوران چٹانیں کھسک آنے یا مٹی تودے گرآنے کی وجہ سے اکثر و بیشتر بند رہتی ہے۔اس شاہراہ کے بند رہنے سے لوگوں کو گونا گوں مشکلات سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ شاہراہ کے بند ہوتے ہی وادی کے بازاروں میں اشیائے ضروریہ خاص طور پر اشیائے خورد ونوش کی قلت پیدا ہوجاتی ہے اور گراں بازاری بھی آسمان چھونے لگتی ہے ہے۔انہوں نے کہا کہ علاوہ ازیں ہوائی کرایہ میں بھی اچانک اضافہ درج ہوتا ہے۔