جے کے سیمنٹس کے سبکدوش ملازمین کا احتجاج

سرینگر// جموں کشمیر سیمنٹس کے سبکدوش ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے انکی واجب الادا تنخواہیں اور پنشن ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔سرینگر کی پریس کالونی میں جموں کشمیر سیمنٹس لمیٹیڈ کے سبکدوش ملازمین جمع ہوئے اور احتجاج کیا۔مظاہرین نے کہا کہ یہ کمپنی1982سے لیکر2021تک منافع بخش ادارہ تھا اور ان تمام برسوں میں سرکار کو منافع دیا۔انہوں نے تاہم الزام عائد کرتے  ہوئے کہا’’2012میں نا اہل انتظامیہ اور سیاست دانوں کے ذاتی مفادات کی وجہ سے اس منافع بخش ادارے کا زوال شروع ہوا،جبکہ سرکار اور انتظامیہ بھی ضروری معاونٹ فراہم کرنے میں ناکام ہوئی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی کمپنی کام کر رہی تھی اور کم از کم اپنے ملازمین کی روزی روٹی برداشت کرنے کی صلاحیت رکھتی تھی لیکن اگست 2019 کے بعد انتظامیہ نے بغیر کسی اطلاع کے فیکٹری کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ۔انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت بھی سابق ملازمین کی ماہانہ تنخواہ، ڈی اے،کولا،پنشن ،ویلفیئر فنڈ اور7ویں تنخواہ کے بقایاجات واجب الادا ہیںاور اس کی واگزاری میں سرکار ناکام ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت وہ اپنے طبی اخرجات تک برداشت نہیں کر رہے ہیں جبکہ انکی بیٹیاں ہاتھوں میں مہندی رچانے کیلئے ترس رہی ہیں کیونکہ عمر بھر جے کے سیمنٹس میں کام کرنے کے بعد بھی ان کے ہاتھ کچھ نہیں لگا۔انہوں نے ایل جی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر ان کی مراعات اور پنشن کی واگزاری کی جائے تاکہ وہ اپنے گھروں کی کفالت کر سکیں۔