جی ایس ٹی رٹرن فائل نہ کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ

 نئی دہلی//گڈز اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) میں رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد تو بڑھ رہی ہے ، لیکن ساتھ ہی رٹرن نہیں فائل کرنے والے ٹیکس دہندگان کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔گزشتہ سال یکم جولائی سے ملک بھر میں ان ڈائرکٹ ٹیکس کا نیا نظام یعنی جی ایس ٹی کا نفاذ عمل میں آیا تھا۔ اس وقت رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد 74،61،214 تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ اب تک 87.02 فیصد افرادنے جولائی 2017 کے لئے رٹرن داخل کیا ہے . وہیں، اس سال جولائی میں رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 94،70،282 ہو گئی ہے ، لیکن ان میں سے 73.15 فیصد نے ہی رٹرن داخل کیا ہے ۔ جی ایس ٹی کے تحت ڈیڑھ کروڑ روپے تک کا سالانہ کاروبار کرنے والے ٹیکس دہندگان کو اب سہ ماہی رٹرن بھرنا ہوتا ہے جس کی آخری تاریخ سہ ماہی ختم ہونے کے بعد ایک ماہ تک ہوتی ہے ۔ وہیں ڈیڑھ کروڑ روپے سے زیادہ کا کاروبار کرنے والوں کو ہر ماہ رٹرن داخل کرنا ہوتا ہے اور اس کے لئے انہیں 20 دن کا وقت ملتا ہے ۔ آخری تاریخ کے بعد رٹرن فائل کرنے پر جرمانہ دینا ہوتا ہے ۔حالانکہ جی ایس ٹی کونسل وقتاً فوقتاً مختلف اسباب کی بنیاد پر آخری تاریخ کے بعد جرمانے میں راحت دیتی رہی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ تشویش کی بات یہ ہے کہ رٹرن نہیں بھرنے والوں کی شرح مسلسل بڑھتی جا رہی ہے ۔ نومبر 2017کے لئے اس وقت رجسٹرڈ 88.60 فیصد ٹیکس دہندگان نے اب تک رٹرن داخل کیا ہے ۔ دسمبر 2017 کے لئے 87 فیصد، اس سال جنوری کے لئے 86 فیصد، فروری کے لئے 85 فیصد اور مارچ کے لئے 83 فیصد ٹیکس دہندگان نے رٹرن داخل کیا ہوا ہے ۔ رواں مالی سال میں اپریل کے لئے 82 فیصد، مئی کے لئے 79 فیصد، جون کے لئے 77 فیصد اور جولائی کے لئے 73.15 فیصد رٹرن اب تک بھرا گیا ہے ۔ سب سے زیادہ 93.28 فیصد رٹرن گزشتہ سال اگست کے لئے بھرے گئے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جولائی کے لئے کمپوزٹ زمرے کے ڈیڑھ کروڑ روپے سے کم کا کاروبار کرنے والے ٹیکس دہندگان کے رٹر ن 31 اکتوبر تک داخل کئے جانے ہیں، لہذا اس کے اعدادوشمار میں بہتری کی گنجائش ہے ۔ لیکن، پرانے اعداد و شمار میں بہت زیادہ بہتری کے امکان نہیں ہیں۔ وہیں، ایک مثبت بہتری یہ آئی ہے کہ رٹرن فائل کرنے والے اب بڑی تعداد میں وقت کی حد کے اندر رٹرن بھرنے لگے ہیں تاکہ انہیں جرمانہ نہ دینا پڑے ۔  وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے گزشتہ ہفتے بتایا تھا کہ جولائی 2017 میں اس وقت رجسٹرڈ ٹیکس دہندگان میں سے صرف 51.40 فیصد نے ہی وقت کی حد کے اندر رٹرن داخل کیاتھا۔ ایسے ٹیکس دہندگان کی تعداد اس سال جولائی میں بڑھ کر 67.99 فیصد ہو گئی ہے ۔یو این آئی