جی ایس ٹی ،بے روزگاری گجرات میں غیر ریاستی مزدوروں پر حملوں کی اصل وجہ:راہل

نئی دہلی//کانگریس صدر راہل گاندھی نے گجرات میں شمالی ہندوستانیوں پر حملوں کے لئے بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کی پالیسیوں کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا ہے کہ اشیا اور سروس ٹیکس(جی ایس ٹی)کے غلط طریقے سے نفاذ اور بڑھتی ہوئی بے روزگاری کی وجہ سے وہاں دوسری ریاستوں کے مزدوروں پر حملے ہورہے ہیں۔مسٹر گاندھی نے منگل کو فیس بک پر کہا کہ بی جے پی حکومت نے پہلے کرنسی نوٹوں کی منسوخی کی اور پھر جی ایس ٹی کو غلط طریقے سے نافذ کیا ہے جس کی وجہ سے گجرات میں کاروبار بند ہوگئے اور معیشت درہم برہم ہوگئی ہے ۔اس سے بے روزگاری اور غریبی بڑھتی جارہی ہے اور لوگوں میں غصہ بڑھ رہا ہے ۔دوسری ریاستوں سے کام کی تلاش میں آنے والے مزدوروں پر یہاں ہونے والے حملے روکنے کے لئے حکومت کو سخت قدم اٹھانے چاہئے ۔کانگریس صدر نے اپنے پوسٹ میں کہا،''کمزور اقتصادی پالیسیاں،نوٹوں کی منسوخی اور جی ایس ٹی کو صحیح طریقے سے نافذ نہ کرنے کے برے نتائج ہیں کہ پورے گجرات میں کاروبار تباہ ہوگئے ہیں۔صنعتی اکائیاں بند ہوگئی ہیں ،جس کی وجہ سے بڑے پیمانے پر بے روزگاری کا بحران کھڑا ہوگیا ہے ۔حکومت روزگار کے مواقع پیدا نہیں کر پارہی ہے اور اس کی نااہلی اور ناکامی کی وجہ سے نوجوانوں میں ناامیدی اور غصہ بڑھتا جارہا ہے ۔نوجوانوں کا یہی غصہ اور ناامیدی وہاں کام کرنے گئے دوسری ریاستوں کے مزدوروں پر پرتشدد حملوں کی شکل میں ظاہر ہورہا ہے ۔دوسری ریاستوں کے مزدور ہماری اقتصادی ترقی کے لئے اہم ہیں۔ان پر حملوں سے خوف اور غیر محفوظ ماحول پیدا ہورہا ہے اور یہ صورت حال ہماری معیشت کے لئے اچھی نہیں ہوگی۔حکومت اسے روکنے کے لئے سختی سے کارروائی کرے اور امن قائم کرنے اور ملک کے ہر شہری کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے لئے ہر ممکن قدم اٹھائے ۔یواین آئی۔