جھیل ڈل میں غیرقانونی تعمیرات ناقابل برداشت: لاوڈا | روزانہ 800مزدورگھاس پھوس نکالنے کے کام میں مصروف

سرینگر //لیکس اینڈ واٹر ویز ڈیولپمنٹ اتھارٹی (لاوڈا)کا کہنا ہے کہ جھیل ڈل کی صفائی ستھرائی کیلئے5 جدید مشینیں لائی گئی ہیں اور روزانہ کی بنیادوں پر ڈل سے گھاس پھوس نکالنے کا کام بھی جاری ہے ۔اتھارٹی کے ایک اعلیٰ افسر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ قریب 15سال بعد ایسی 5جدیدمشینوں کو خریدا گیا ہے جو نہ صرف ماحولیات دوست ہیں بلکہ اس سے صفائی ستھرائی کے کام میں آسانی ہو گئی ہے ۔مذکورہ افسر کا کہنا تھا کہ جموں وکشمیر ہائی کورٹ نے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جو جھیل ڈل کی صفائی ستھرائی کے حوالے سے نظر گزر رکھ رہی ہے اور اسی کمیٹی کی سفارش پر ہی مشینوں کو خریدا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اب ان مشینوں سے صفائی کے کام میں آسانی ہو گئی ہے ۔افسر نے مزید بتایا کہ ڈل کے کچھ ایک علاقوں میں100کے قریب بائیو ڈاجسٹر بھی نصب کرنے ہیں جو ماحول دوست ہوں گے جبکہ ہاوس بوٹوں کیلئے بھی مخصوص پروجیکٹ شروع کئے گئے ہیں جن کی ٹنڈرنگ کا عمل مکمل کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ڈل کی صفائی کا کام روزانہ کی بنیادوں پر چل رہا ہے اور دن میں قریب800مزدور صفائی ستھرائی کے کام پر مامور ہیں ۔افسر کا کہنا ہے کہ ڈل میں غیر قانی تعمیرات کی جہاں کہیں سے بھی خبریں آتی ہیں ،وہاں چیکنگ سکارڈ ٹیموں کو بھیج کر کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے اور غیر قانونی تعمیرات کو منہدم کیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ محکمہ نے اس کیلئے تمام نمبرات جاری کئے ہیں ۔ انہوں نے لوگوں سے کہا ہے کہ اگر کسی جگہ بھی کوئی غیر قانونی قبضہ کرتا ہوا پایا گیا اس کے خلاف سخت قانونی کارروائی بھی عمل میں لائی جائے گی ۔