جنگلات کے حقوق | کولگام میں تربیتی پروگرام کا انعقاد

کولگام +گریز //ضلع ڈیولپمنٹ کونسلروں ، بلاک ڈیولپمنٹ کونسل کے چیئرپرسن ، سرپنچوں اور پنچوں کو فارسٹ رائٹس ایکٹ (ایف آر اے) 2006 ، شیڈول ٹرائب اور دیگر روایتی جنگل کے باشندوں (جنگل کے حقوق کی پہچان) کے نفاذ میں ان کے کردار کے بارے میں حساس کرنے کے لئے ایک پروگرام منعقد ہوا۔ڈسٹرکٹ پنچایت آفس کے ذریعہ یہ پروگرام ڈپٹی کمشنر (ڈی سی) کولگام شوکت اعجاز بٹ کی صدارت میں منعقد کیا گیا ۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے ضلع میں فارسٹ رائٹس ایکٹ کے نفاذ کیلئے لائحہ عمل کے بارے میں تفصیل سے بتایا۔انہوں نے جنگل کے حقوق اور ایکٹ کے کامیاب نفاذ کے لئے صبر ، جذبے اور پوری تیاری کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔بعد میں ، ڈی سی نے مختلف اسکیموں اور پروگراموں کو اجاگر کیا۔اس پروگرام میں دیگر افراد کے درمیان ڈسٹرکٹ پنچایت آفیسر ، ڈویڑنل فارسٹ آفیسر اور دیگر متعلقہ افسران و اہلکار شریک تھے۔ادھر  داور گریز میں بھی ایس ڈی ایم مدثر احمد کی نگرانی میں ایساہی ایک پروگرام منعقد کیا گیا۔اس موقع پر ایس ڈی ایم نے اس ایکٹ کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالی اور کہا کہ ایف آر اے 2006 کے موثر نفاذ سے جنگل کے باشندوں کو بااختیار بنائیں گے اور ان کو ان کے حقوق ملیں گے۔ انہوں نے متعلقہ حکام پر زور دیا کہ ہم آہنگی کے ساتھ کام کریں تاکہ کسی بھی قسم کی رکاوٹ کو پریشانی سے پاک طریقے سے حل کیا جاسکے۔بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر (بی ڈی او) گریز امتیاز احمد نے فارسٹ رائٹس ایکٹ -2006 کے سلسلے میںایک پاور پوائنٹ پرزنٹیشن کے ذریعے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی۔علاقے میںسخت ترین سردی اور شدید برف باری کے باوجود ایک بڑی تعداد نے تربیتی پروگرام میں شرکت کی۔