جنگلات اراضی کی واگزاری مہم ایک سازش: یوتھ این سی

 بٹوت// ریاست جموں وکشمیر میں جنگلاتی اراضی سے قبضہ چھڑا نے کے نام پر ریاستی وزیر جنگلات کی جانب سے چھیڑی گئی مہم کو زبر دست ہدف تنقید بناتے ہوئے یوتھ نیشنل کانفرنس صوبہ جموں کے صوبائی سیکریٹری عابد اقبال ماگرے نے بٹوت میں پارٹی ورکران سے اپنے خطاب میں کہا ریاستی مخلوط حکومت کا وزیر جنگلات آر ایس ایس کی ہدایت پر جنگلاتی اراضی سے نام نہاد ناجائز قبضہ چھڑا نے کے نام پر چھڑی مہم میں ریاست میں ایک مخصوص مذہبی فرقے سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو ہی نشانہ بنا رہا ہے ۔ ماگرے نے کہا جنگلاتی اراضی سے قبضہ چھڑا نا ایک بہانہ یہ اصل میں اپنے سیاسی آقائوں کی شہہ پر ایک مخصوص فرقے کو نشانہ بنا نا ہے ۔ ماگرے کے بقول ریاست کا وزیر جنگلات اپنی فرقہ پر ستی پر مبنی سوچ کے مطابق جنگلاتی اراضی سے قبضہ چھڑا نے کی مہم میں ریاست بھر میں ایک ہی مذہب سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے پیچھے پڑا ہوا ہے ۔ ماگرے کے مطابق محکمہ جنگلات جنگلاتی اراضی سے قبضہ چھڑا نیکے نام پر ہی نہیں بلکہ جموں سرینگر فور لائن تعمیری منصوبے میں بھی رخنہ اندازی کر رہاہے اور بار رہا کی بے جا مداخت کر کے تعمیری کام میں رکاوٹیں ڈال رہا ہے ۔ جس کی وجہ سے نا شری سے رام بن اور بانہال تک فور لائن نیشنل ہائی وے کا کام بری طرح سے متاثر ہورہا ہے ۔ انہوں نے وزیر اعظم  سے ذاتی مداخلت کی اپیل کی تاکہ ریاست کے سیکولر عوام کا اعتماد بحال رہ سکے ۔ ماگرے نے ریاستی مخلوط حکومت کو بھی اپنی سخت تنقید کا نشانہ بنا تے ہو ئے کہاکہ ریاست کی موجودہ مخلوط حکومت ریاست کے عوام کے لئے مصیبتوںو پریشانیوں کی وجہ بن چکی ہے اور ریاست کے عوام جلد از جلد اس نا کام حکومت سے نجات حاصل کر نے کے متمنی ہیں ۔