جنگجوؤں کی ہلاکت

   سوپور// شمالی کشمیر میں جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف ان کے آبائی علاقوں پلہالن اور سوپور میں منگل کو مکمل ہڑتال کی گئی۔ زچلڈارہ ہندوارہ میں پیر کی شام عاشق احمد ساکن پلہالن پٹن اور طیب مجید میر ساکن براٹھ کلان سوپور مارے گئے۔دونوں جنگجوئو ں کو اپنے اپنے آبائی گائوں میں سپرد خاک کیا گیا۔ طیب مجید میر اور اس کے ساتھی عاشق احمد بٹ کے نماز جنازہ میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی۔ادھرہڑتال کے دوران دکانیں اور تجارتی مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر گاڑیوں کی آواجاہی جزوی طور پر معطل رہی۔ ضلع بارہمولہ میں احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔ طیب مجید کونمازجنازہ ادا کرنے کیلئے گھر سے مقامی میدان لے جانے کے دورا ن لوگوں نے زبردست نعرے بازی کی ۔مہلوک جنگجو کی تجہیز وتکفین میں شریک ہونے کیلئے اُن کے آبائی گائوں براٹھ میں لوگوں کی کثیر تعداد جمع ہوئی جن میں زن ومرد اور بچے شامل تھے ۔ا س موقعہ پر لوگوں نے آزادی اور پاکستان کے حق میںاور ہندوستان کے خلاف نعرے لگائے گئے۔طیب مجید میر ولد عبدالمجید ساکن براتھ کلان نے 2016میں حزب المجاہدین میں شمولیت اختیار کی تھی ،وہ اپنے ایک ساتھی اعجاز شیخ کے ساتھ مئی2016میں لاپتہ ہوا تھا ۔ اعجاز گزشتہ سال ناتھی پورہ میں فورسز کے ساتھ جھڑپ میں جاں بحق ہواتھا ۔ قابل ذکر ہے کہ طیب امسال فورسز کے ساتھ مارا جانے والا براٹھ  کا چوتھا جنگجو ہے ۔پلہالن پٹن میں بھی عاشق احمد بٹ کے نماز جنازہ میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی ۔ کہا جاتا ہے کہ عاشق پلہالن گائوں کا آخری جنگجو تھا ۔