جموں کشمیر میں محکمہ انفارمیشن اینڈٹیکنالوجی حرکت میں 6 خدمت مراکزکی لائسنس منسوخ لوگوں سے اضافی چارجزوصولنے کا شاخسانہ،ایک سال میں 664مراکز بند کئے گئے

 عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// کامن سروس سنٹروں  سی ایس سی پر لوگوں کی دی جارہی خدمات کے عوض مقررہ چارجز سے زیادہ کی وصولیابی پر محکمہ انفارمیشن اینڈٹیکنالوجی کی ٹیموں نے جموں و کشمیر میں چھاپہ مار کارروائیوں کے دوران 6 لائسنس کو منسوخ کردیاہے۔ کمشنر سکریٹری پریرنا پوری کی نگرانی میں معائنہ ٹیموں نے جموں اور سانبہ کے جڑواں اضلاع اور کشمیر کے بڈگام ضلع میں مختلف (سی ایس سی )خدمات مراکز کی اچانک چیکنگ کی۔ یہ معائنہ کراس چیک کرنے اور سی ایس سی کے حکومتی مطلع شدہ نرخوں پر عمل کرنے کی تصدیق کے لیے کیا گیا تھا۔ انسپکشن ٹیموں کی نگرانی ایڈیشنل سیکرٹری آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ اعجاز قیصر نے کی۔چیکنگ کے دوران، جموں صوبہ میں سانبہ اور کٹھوعہ اضلاع کے 45 سی ایس سی (ضلع سانبہ کے 22 اور ضلع کٹھوعہ کے 23 ) جبکہ کشمیر صوبہ میں بڈگام ضلع کے 28 (سی ایس سی) کا معائنہ کیا گیا۔ معائنہ ٹیموں نے جموں صوبہ میں 3 اور کشمیر صوبہ میں 3 کے لائسنس منسوخ کردیئے ۔

 

قابل ذکر بات یہ ہے کہ آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ نے مختلف آن لائن خدمات حاصل کرنے کے لیے نرخوں کومقرر کیا ہے۔ حکومت سے شہری خدمت کے لیے 50 روپے فی سروس اور حکومت سے کاروباری خدمات کے لیے 75 روپے مقرر ہے۔ زائد چارجز کی شکایات کی بنیاد پر، گزشتہ 1 سال میں 664 سی ایس سی لائسنس منسوخ کیے گئے ہیں جن میں( (2023-24 میں 624 اور( 2024-25) میں 40 لائسنس شامل ہیں۔دریں اثنا اس بات کو یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے کہ نوٹیفائیڈ نرخوں کو ہر CSC میں نمایاں جگہ پر نمایاں طور پر آویزاں کیا جائے تاکہ تمام ولیج لیول انٹرپرینیورز (VLEs) کو مطلع شدہ نرخوں کے بارے میں آگاہ کیا جاسکے۔واضح طور پر، عام لوگوں کو بغیر کسی رکاوٹ کے آن لائن خدمات فراہم کرکے ڈیجیٹل انڈیا کے مقصد کو حاصل کرنے کے مقصد سے، چیف سکریٹری، اٹل ڈلو نے مختلف سرکاری دفاتر، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں سی ایس سی کے لیے نئے ٹچ پوائنٹس قائم کرنے کی ہدایات جاری کی تھیں۔ اس کے علاوہ تمام ڈپٹی کمشنرز کو نئے ٹچ پوائنٹس کے قیام کے لیے ایسے تمام دفاتر میں جگہیں مختص کرنے کی بھی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ تمام اضلاع کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز (ADCs) کو نوڈل آفیسرز کے طور پر نامزد کیا گیا ہے تاکہ نئے ٹچ پوائنٹس کو کھولنے میں آسانی اور تیزی لائی جا سکے۔آج تک، 446 نئے مراکزقائم کیے گئے ہیں، اور 13081 سی ایس سی بشمول 537 PACs اور 2160 FPS فعال ہیں اور جموں و کشمیر کے یونین ٹیریٹری میںڈیجی سیوا پورٹل( Digi-Seva Portal )پر خدمات فراہم کر رہے ہیں۔