جموں و کشمیر کے سابق گورنر لیفٹنٹ جنرل سنہا کا انتقال

  نئی دہلی //جموں و کشمیر کے سابق گورنر لیفٹنٹ جنرل ایس کے سنہا کا یہاں فوج کے ریسرچ اینڈ ریفرل (آر آر) اسپتال میں انتقال ہوگیا۔  وہ 92 برس کے تھے اور گزشتہ کچھ دنوں اسپتال میں داخل تھے ۔ ان کے پسماندگان میں بیوی اور بیٹا ہے۔ وہ 2003 سے 2008 تک ریاست کے گورنر رہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے جنرل سنہا کے انتقال پر رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔ سنہا کی وفات پر ریاستی سرکار نے تین دِن تک ریاست میں سوگ کا اعلان کیا ہے ۔ اس دوران تمام عمارات پر قومی اور ریاستی جھنڈے سرنگم رہیں گے اور اس دوران کوئی سرکاری تفریحی تقریب منعقد نہیں ہوگی ۔گورنر این این ووہرا نے ریاست کے سابق گورنر کی وفات پر اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ اپنے تعزیتی پیغام میں گورنر نے آنجہانی کو ایک باصلاحیت منتظم قرار دیا جنہوں نے عوام کی خدمات کو اپنا شعار بنا لیا تھا۔وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے سنہا کی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔ تعزیتی پیغام میں وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سنہا نے ریاست میں اپنے دور کے دوران اپنی شخصیت کی گہری چھاپ چھوڑی ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی ترقی میں جتنی دلچسپی کا اظہار کیا اُسے ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر نرمل سنگھ  اوروزیر اعلیٰ کے مشیر پروفیسر امیتابھ مٹو نے  ایس کے سنہا کی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔اپنے ایک تعزیتی پیغامات میںانہوں نے سوگوار کنبہ سے تعزیت کا اظہارکیا۔