جموں وکشمیر نیشنل ہیلتھ فیسٹول | نئی سپورٹس پالیسی سے ایک اچھی شروعات ہوئی:لیفٹیننٹ گورنر

نیوز ڈیسک
جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے جموں یونیورسٹی میں جسمانی طور خاص کھلاڑیوں کواعزاز دینے کی خاطر سپیشل اولمپکس بھارت جموں وکشمیر کے زیر اہتمام دیو یانگجن کے لئے نیشنل ہیلتھ فیسٹول میں شرکت کی۔یہ پروگرام عالمی یوم صحت کے موقعہ پر ہندوستان کے 75 شہروں میں آزادی کے 75 برس مکمل ہونے پر ’’ آزادی کا اَمرت مہااُتسو‘‘ کے سلسلے میں سپیشل اولمپکس بھارت، کھیلوں کی بین الاقوامی فیڈریشن سے تسلیم شدہ کھیلوں کی آرگنائزیشن کے ذریعے منعقد کیا جارہا ہے ۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جموںوکشمیر یوٹی میں ایک نئی سپورٹس پالیسی سے ایک اچھی شروعات کی گئی ہے جس میں کھیل سہولیات اور جسمانی طورخاص اَفراد کی فلاح و بہبود پر توجہ دی گئی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے انہیں نوجوان نسل کے لئے حقیقی رول ماڈل قرار دیتے ہوئے کہا کہ جسمانی طور خاص کھلاڑیوں نے بین الاقوامی مقابلوں میں اَپنی شاندار کارکردگی سے اُمید روشن کی ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ سکولوں اور پنچایتوں کو یہ ذمہ داری دی گئی ہے کہ وہ کھیل بنیادی ڈھانچے کی سہولیات پیدا کریں تاکہ عوام میں بالخصوص بچوں اور نوجوانوں میں کھیلوں کی مضبوط ثقافت کو مقبول بنایا جا سکے۔لیفٹیننٹ گورنر نے نوٹ کیا کہ 2015 ء سے پہلے ہمارے ملک کے تمام قوانین کا مقصد کسی نہ کسی طرح جسمانی طور خاص افراد کو سماجی بہبود کے پروگراموں سے جوڑنا تھا۔ 2015 ء کے بعد ایک نیا سماجی شعور اُبھرا جس میں سماجی بہبود کے اِقدامات کے تحت صرف فوائد کے بجائے دیویانگجن کو ان کے جائز حقوق دینے پر توجہ مرکوز کی گئی۔ اس  دوران، قابل رسائی ہندوستان مہم ایک عوامی تحریک میں بدل گئی جس نے جسمانی طور خاص افراد کے لئے سرکاری اور نجی عمارتوں، ریلوے سٹیشنوں، ہوائی اڈوں، سکولوں اور کالجوں میں قابل رَسائی بنیادی ڈھانچہ پیدا کیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے سماج کے تمام طبقوں کی ضروریات اور خواہشات کو مدنظر رکھتے ہوئے کئے جانے والے بے مثال کام کو اُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر یوٹی قومی اَقدار اور عوام کی خدمت کے جذبے کے ساتھ مثبت پیش رفت کی سمت میں آگے بڑھ رہا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ کھیل بنیادی ڈھانچے کو ترقی دی جائے، عالمی معیار کی کوچنگ فراہم کی جائے اور جسمانی طور خاص کھلاڑیوں پر خصوصی زور دے کر کھیلوں کے ٹیلنٹ کی حوصلہ اَفزائی کی جائے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ بغیر کسی امتیاز کے ایک جامع اور مساوی کھیلوں کا ماحولیاتی نظام تشکیل دیناہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے ان آرگنائزیشنوں کو جموں وکشمیر یوٹی حکومت کے ہر ممکن تعاون کا یقین دِلایا جو خصوصی صلاحیتوں کے حامل کھلاڑیوں کی فلاح و بہبود کے لئے کام کر رہی ہیں۔ اِس برس تمام 20اَضلاع میں 221 کھیل میدان تعمیر کئے جائیں گے ۔ ا ِس کے علاوہ 157 سپورٹس کورٹس کی تعمیر اور اَپ گریڈیشن مکمل کی جائے گی۔