جموں میں کشمیریوں پر حملوں کیخلاف وادی میں فقید المثال ہڑتال سے معمولات ٹھپ

سرینگر/وادی میں اتوار کو کشمیریوں پر جموں اور بھارت کے دیگر حصوںمیں حملوں کیخلاف فقید المثال ہڑتال سے معمولات مکمل طور ٹھپ رہے۔

وادی بھر میں تمام دکان اور کاروباری ادارے بند جبکہ سڑکیں سنسان رہیں۔

شہر سرینگر میں ہوکا عالم رہا اور لوگ اپنے گھروں کے اندر ہی دن گذار۔

 آج کے ہڑتال کی اپیل جموں اور بھارت کے دوسرے حصوں میں مقیم کشمیریوں پر ہورہے حملوں کیخلاف احتجاج کرنے کیلئے وادی میں سرگرم تجارتی انجمنوں نے کی تھی۔

جموں میں لیتہ پورہ خود کُش حملے کے بعد متعدد کشمیریوں پر حملے ہوئے ہیں۔ گذشتہ جمعرات کو ہوئے اس حملے میں کم سے کم49فورسز اہلکار ہلاک ہوگئے۔

وادی کی تجارتی انجمنوں کا مطالبہ ہے کہ جموں اور دوسرے علاقوں میں مقیم کشمیریوں کو تحفظ فراہم کیا جائے۔  

حکام  نے  پوری  وادی  کشمیر  میں  موباءیل  انٹرنیٹ   سروس  معطل  کر  رکھی  ہے۔