جموں میں بیساکھی کا تہوار جوش وخروش اور مذہبی عقیدت کیساتھ سے منایا گیا

عظمیٰ نیوز سروس

جموں //جموں وکشمیر کے دیگر حصوں کی ہی طرح جموں میں بھی سکھ برادری نے بیساکھی کا تہوار انتہائی جوش و خروش اور مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا۔یہ تہوار خالصہ پنتھ کے قیام اور فصلوں کی کٹائی کی خوشی میں منایا جاتا ہے۔ جموں میں ہفتے کی صبح سے ہی سکھ برادری سے وابستہ لوگوں کا گردواروں اور دوسرے مذہبی مقامات پر تانتا بندھا رہا۔سکھ عقیدت مندوں کی بڑی تعداد، جن میں خواتین، عمر رسیدہ افراد اور بچوں کی خاصی تعداد شامل تھی، نے صبح سویرے سے ہی اس گردوارے پر حاضری دینا شروع کی تھی۔چھٹی پادشاہی گردوارہ تقریب کی طرز پر کئی گردوروں میں بھی تقریبات منعقد کی گئیں ۔اس موقع پر شہر کے تمام گردواروں میں خصوصی تقریبات کا انعقاد کیا گیا ہے۔ صوبے کے دوسرے اضلاع بشمول ادھم پور، کٹھوعہ اور سانبہ میں بھی خصوصی تقریبات کا انعقاد کیا گیا ہے۔سینئر سٹیزن سروس سپورٹ کلب کے ممبران نے جمعہ کو بیساکھی کا تہوار چوڑی میں واقع اپنے کلب کے احاطے میں منایا۔ بیساکھی ملن تقریب رنگا رنگ تہواروں – رقص، موسیقی اور تفریح کے ساتھ میلے میں بدل گئی۔ تقریب میں بہت سے ریٹائرڈ سرکاری اور نجی شعبے کے افسران، صنعتکاروں اور بہت سے پیشہ ور افراد نے شرکت کی۔ کلب کے ممبران بڑی تعداد میں جمع ہوئے اور گانے، ڈرامہ، رقص اور دیگر سرگرمیوں میں جوش و خروش سے حصہ لیا۔ اس دوران جی ایم سی جموں کے سابق پرنسپل اور کلب کے چیئرمین ڈاکٹر کستوریہ لال نے بیساکھی کی اہمیت پر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ تہوار نہ صرف کسانوں کے لئے فصل کی کٹائی کے لحاظ سے اہم ہے بلکہ سکھ مذہب میں خالصہ پنتھ کے یوم تاسیس کے طور پر بھی اس کی بڑی اہمیت ہے۔ انہوں نے کہا کہ بیساکھی شمسی سال کی نئی پن، ایک اہم نجومی تبدیلی اور ہماری زندگیوں میں روشنی کی آمد کی نشاندہی کرتی ہے۔ کلب کے نائب صدر ایس کے جین نے نیچروپیتھی پر بات کی اور زندگی کے بڑھتے ہوئے سالوں میں لمبی عمر بڑھانے اور صحت مند رہنے کے لئے قیمتی ٹپس دیں۔ بیساکھی ملن کے اختتام پر اس تہوار سے متعلق مزیدار ریفریشمنٹ پیش کی گئی۔ اس موقع پر کلب کے صدر اشوک گپتا، جنرل سکریٹری ایس کے شرما، انجو بنسل، ڈاکٹر نونیت کور، کیلاش لینگر، این سی پربھاکر، راجکمار، رمن گنڈوترا، انیل گپتا، سبھاش دتہ، میڈیا سکریٹری ڈاکٹر وجے شرما، ڈاکٹر شفیکا بانو، یشپال وغیرہ موجود تھے۔ تقریب میں شرما، ابھینندن جین اور ڈاکٹر وجے شرما وغیرہ موجود تھے۔بی جے پی کے ترجمان رنبیر سنگھ پٹھانیہ نے دیویکا (نائنسو) میں روایتی بیساکھی میلے کا افتتاح کیا، جس نے جدید اثرات کے درمیان ہماری روایات اور بھرپور ثقافت کے تحفظ کی اہمیت کو اجاگر کیا۔ شیو مندر دیویکا میلہ پربھندک کمیٹی، نینسو کے زیر اہتمام، ضلع انتظامیہ کی حمایت سے، مقدس دیویکا ندی کے کنارے پر 3 روزہ بیساکھی میلہ مختلف علاقوں سے پہلوانوں، زائرین، دکانداروں اور عقیدت مندوں کو اپنی طرف متوجہ کرتا ہے۔پہلی بیساکھ کے موقع پر ہونے والا تاریخی بیساکھی میلہ، جسے مقامی طور پر ’بسوا‘ کے نام سے جانا جاتا ہے۔پٹھانیہ نے بیساکھی کی پرتپاک مبارکباد پیش کی، اس تہوار کی جموں و کشمیر میں امن، خوشحالی اور اتحاد کو فروغ دینے کی صلاحیت پر زور دیا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ یہ روایات سماجی ہم آہنگی کو فروغ دینے، برادریوں کو متحد کرنے اور علاقے کی ثقافتی دولت کو اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ یہ تہوار زائرین کو ڈوگرہ برادری کی وراثت، فنون، دستکاری اور روایات سے منسلک ہونے کے لئے ایک پلیٹ فارم پیش کرتے ہیں، جو روزمرہ کی زندگی میں رونق پیدا کرتے ہیں۔