جموں اور سرینگر میں’ رنگ روڈ پروجیکٹ ‘کی تعمیر

 جموں //جموں اور سرینگر شہرکے رنگ روڈ پروجیکٹ کی تعمیر سے متاثر ہو نے والے کسانوں نے ریاستی گورنر کے مشیر کے کے شرما اور ریاستی چیف سیکریٹری کیساتھ جموں میں ملا قات کرنے کے ہفتہ بعد جموں میں ایک اجلاس منعقد کیا جس میں انہوں نے طے کیا کہ ان دونوں پروجیکٹوں کی تعمیر سے متاثر ہو نے کسان متحد ہو کر معاوضہ کیلئے لڑائی شروع کر ینگے ۔رنگ روڈ جموں کسان سنگریش سمیتی اور سیمی رنگ روڈ لیڈ اونر ویلفیئر کمیٹی کشمیر کی ایک میٹنگ جموں میں منعقد کی گئی جس میں اراکین کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔اس اجلاس کے دوران اراکین نے آئندہ پیر کو جموں میں پروجیکٹ سے متاثر ہو نے والے کسانوں کے معاوضے اور ان کو درپیش مسائل کے سلسلہ میں مشترکہ پریس کا نفرنس بھی کرینگے ۔اس سلسلہ میں اراکین نے گزشتہ ہفتے ریاستی گورنر کے مشیر کے کے شرما اور چیف سیکریٹری کیساتھ بھی ملاقات کی تھی جس کے دوران انہوں نے پروجیکٹ کی تعمیر سے کسانوں کو درپیش مسائل اور ہونے والے نقصانات کے بارے میں جانکاری فراہم کی تھی ۔یاد رہے اد دونوں پر وجیکٹوں کی تعمیر سے جموں اور بڈگام ضلع میں مجموعی پر 9ہزار کنال راضی متاثر ہو گی ۔جموں میں کسانوں کے مشترکہ اجلاس میں ان متاثر کسانوں نے کو آرڈینش کمیٹی تشکیل دی ہے جس میں دونوں خطوں کے اراکین شامل ہیں ۔اس کمیٹی میں جی اے پال ،ڈی پی شرما ،ڈاکٹر راجہ مظفر ،بلویندر سنگھ ،چمن شرما ،ہربنس سنگھ ،حاجی غلام حسین ،غلام علی سوبت علی ،ستپال شرما ،محمود وانی ودیگران شامل ہیں ۔جموں میں کسانوں کی کی گئی مشترکہ میٹنگ میں اراکین نے کہاکہ ریاستی انتظامیہ معاوضہ کے سلسلہ میں قوانین کو یکسر نظر اندازکر رہی ہے ۔اس موقعہ پر بولتے ہوئے جی اے پال نے کہاکہ کسانوں کے معاملات کے سلسلہ میں انہوں نے ریاستی چیف سیکریٹری کو بھی آگا ہ کیا ہے جبکہ ریاست میں زمین کی حصولی سے متعلقہ قوانین اور کسانوں کے نقصان کے بارے میں ریاستی گورنر کے مشیر کو بھی جانکاری فراہم کی گئی ہے ۔انہوں نے مزیدکہاکہ مذکورہ معاملہ پر انہوں نے ریاستی گورنر سے رجوع کرنے کی بھی کرشش کی ہے لیکن ابھی تک مثبت جواب نہیں ملا ہے ۔