جل جیون مشن | 4لاکھ 62ہزار پانی کے نل کنکشنوں سے صارفین مستفید،

سرینگر//حکومت کی جانب سے جموںوکشمیر  میں جل جیون مشن کے تحت 2 برسوں کے دوران4لاکھ62ہزار فعال نل کنکشنوں سے صارفین کو مستفید کیا گیا۔ سرکار کی جانب سے جل جیون مشن کے تحت جموں کشمیر میںسال 2022ء تک صدفیصددیہی گھرانوں کو پانی کے نل کنکشن کے دائرے میں لانے کی کاوشیں جاری ہیں۔ جل جیون مشن کے جموں کشمیرمشن ڈائریکٹوریٹ کے ذریعہ وضع کردہ نقشِ راہ کے پہلے مرحلے میں2 اَضلاع سرینگر اور گاندربل کے11بلاکوں کی383پنچایتوں اور 925دیہات کو صد فیصد پائپوں سے پانی کے نل کنکشن فراہم کرنے کے دائرے میں لایا گیا ہے۔ اہم کلیدی اورفلیگ شپ پروگرام جل جیون مشن 15؍اگست2019ء میں شروع کیا گیا ہے جبکہ جموں کشمیر یوٹی میں جل جیون مشن کے تحت تمام20اَضلاع تک پانی پہنچانے کا ہدف مقرر کیا گیا۔محکمہ جل شکتی (پی ایچ ای)کے اعداد و شمار کے مطابق18لاکھ 35ہزار دیہی گھرانوں میں سے 5لاکھ75ہزار(31.36فیصد) گھرانے مشن کے آغاز پر یعنی 15؍اگست 2019 تک پائپوں کے ذریعے پانی کے کنکشن سے جڑے ہوئے تھے۔ جموں و کشمیر میں اس وقت تک10لاکھ37ہزار کنبوں(56.51فیصد) کو نل کے کنکشن فراہم کئے گئے ہیںجن میں سے امسال2020-21ء کے دوران ہی2لاکھ22ہزار پانی کے کنکشن فراہم کئے گئے ہیں۔جل جیون مشن نے 11اَضلاع کا احاطہ کرنے کے لئے جاری دوسرے مرحلے میں اَپنے تمام اَفراد اور مشینری کو متحرک کیاہے جس میں 153بلاک ،1952پنچایتیں اور 3,254گاوں شامل ہیں ، میں 4لاکھ91ہزار فعال گھریلو نل کنکشن ہیں۔جموں و کشمیر میں جل جیون مشن کے آخری مرحلے کے دوران7اَضلاع جن میں 121بلاک، 1660پنچایتیں اور 2,623دیہات شامل ہیں، 3لاکھ 12ہزار فعال گھریلو نل کنکشن فراہم کئے جائیں گے۔محکمہ جل شکتی (پی ایچ ای)کے ایک سینئر اَفسر نے کہا کہ اِس کا مقصد صدفیصد گھرانوں کو ایک مقررہ وقت میں دائرے میں لانا اور پہلے سے فراہم کردہ کنکشن کی فعالیت کو یقینی بنانا ہے۔وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے دیہی علاقوں میں مالی شمولیت، مکانات، سڑک، صاف ایندھن، بجلی اوربیت الخلاء جیسی سہولیات فراہم کرکے’’زندگی گزارنے میں آسانی‘‘کو مزید بہتر بنانے کی اپیل کے مطابق جل جیون مشن کا مقصد2024ء تک دیہی گھرانوں کو پینے کا پانی فراہم کرنا ہے۔