جس تھالی میں کھایااُسی میں چھیدکیا

  سرینگر//نیشنل کانفرنس کے نائب صدراورسابق وزیراعلیٰ عمر عبداللہ نے پیرکو کہا کہ میگھالیہ کے گورنرستیہ پال ملک نے ’’اُسی ہاتھ کو کاٹاہے جس نے اُسے کھلایا‘‘ اور دعویٰ کیا کہ جموں کشمیرکے لوگ اُس کی ’’نا اعتباری‘‘ کی ’’سند‘‘ دے سکتے ہیں۔ سابق وزیراعلیٰ ذرائع ابلاغ کی اُن اطلاعات پرردعمل کا اظہار کررہے تھے جن میںستیہ پال ملک نے دعویٰ کررہے ہیں کہ ان کی کسانوں کے احتجاج پر وزیراعظم  نریندرمودی کے ساتھ تیزکلامی ہوئی۔ عمرعبداللہ نے ایک ٹوئٹ میں کہا،’’یہ آدمی جموں کشمیرمیںاُن کی کلہاڑی پکڑے ہوئے آدمی تھااوراب اُس نے اسی ہاتھ کو کاٹ کھایا ہے جس  نے اُسے کھلایا‘‘۔ ملک جو2019میں جموں کشمیرریاست کی تقسیم سے پہلے اُس کے آخری گورنرتھے ،ایک ویڈیو کلپ میںکہتے ہیں کہ جب وہ کسانوں کے معاملے پر وزیراعظم سے ملنے گئے ،توثانی الذکر ’’گستاخ‘‘تھے اوران کی ساتھ پانچ منٹ میں ان کی تیزکلامی ہوئی۔