جسٹس ماگرے نے 3 بچوں کو جووینائل ہوم سے گھر روانہ کیا

سرینگر//چیئرمین جووئنائل جسٹس کمیٹی جے اینڈ کے ہائی کورٹ جسٹس علی محمد ماگرے نے 3 غیر مقامی بچوں کوابزرویشن ہوم ہارون سے روانہ کیا جنہیں اپنے اپنے کنبوں کو سونپا جائے گا۔ڈائریکٹر سٹیٹ جوڈیشل اکاڈمی(سیکرٹری جووئنال جسٹس کمیٹی ہائی کورٹ) عبدالرشید ملک، ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ سرینگر سید عابد رشید، سٹیٹ مشن ڈائریکٹر آئی سی ڈی ایس جی اے صوفی، ایس ایس پی سرینگر امتیاز اسمعیل، یونیسف انڈیا چائلڈ پروٹیکشن یونٹ کے نمائندے اور دیگر لوگ بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔جسٹس ماگرے نے ان بچوں کے ساتھ استفصار کیا اور ان سے جووئنائل ہوم میں دی جارہی سہولیات کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔ انہوں نے بچوں کو تعلیم جاری رکھنے کی صلاح دی تا کہ ان کا مستقبل سنور سکے۔جسٹس ماگرے نے کہا کہ با ز آباد کاری کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ بچوں کو سماج اور اپنے کنبوں میں اپنا وقار اور اُن کی خود اعتمادی کو بحال کیا جاسکے۔اس موقعہ پر بتایا گیا کہ یہ اقدام حال ہی میں جووئنائل جسٹس نظام سے متعلق منعقدہ کانفرنس کے دوران لئے گئے فیصلوں کی عمل آوری کی نگرانی کرنے کے حوالے سے اُٹھائے جارہے ہیں۔