جرمن چانسلر کا دورئہ اسرائیل، فلسطینی علاقوں میں جانے سے گریز

 بیت المقدس//جرمن چانسلر اولاف شولس اقتدار سنبھالنے کے بعد پہلے دورے پر اسرائیل پہنچ گئے۔ اسرائیلی وزیر اعظم کے ساتھ ملاقات میں انہوں کے ہالوکاسٹ کے مفروضے میں مرنے والوں کی یادگار کا دورہ بھی کیا۔ اپنے دورے کے دوران انہوں نے اسرائیلی حکام کے ساتھ ملاقاتیں کیں،تاہم کسی فلسطینی علاقے کا دورہ نہیں کیا۔ واضح رہے کہ انہوں نے اسرائیل کا دورہ ایک ایسے وقت میں کیا ہے کہ جب مغربی ممالک اور ایران کے مابین جوہری معاہدہ اپنے حتمی مرحلے میں پہنچ چکا ہے۔ادھر اسرائیلی فوج نے گزشتہ ماہ کے دوران بیت المقدس میں اپنی کارروائیاں تیز کردیں۔ فلسطینی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسرائیلی فوج کے تشدد سے 200شہری زخمی ہوئے ،جب کہ 191کو گرفتار کیا گیا۔ 12 فروری سے اسرائیلی فوج نے شیخ جراح میں روزانہ کی بنیاد پر حملے شروع کیے اور اس دوران فلسطینیوں کو گھروں سے بے دخل کرکے بچوں تک کو گرفتار کیا گیا۔