تھوڑی سی بارش نے کھولی گول میں نکاسی آب کی پول | سڑکیں ہوئیں زیر آب ،محکمے اور انتظامیہ خاموش تماشائی

گول//گزشتہ شام کو شدید بارشوں نے اُس وقت محکمہ جات اور انتظامیہ کی دعوئوں کی پول کھول دی جب چند گھنٹوں کے لئے آئی شدید بارشوں کی وجہ سے گول بازار و ملحقہ جات کی سڑکیں زیر آب ہوئیں ۔ شدید بارشوںکی وجہ سے لوگوں کوچلنا مشکل ہو گیا کیونکہ سڑکیں زیر آب تھیں ۔ گول بازاراور لنک روڈوں کی نالیاں خستہ حالت کی شکار ہیں جہاں ملبے کی وجہ سے نالیاں بند پڑی ہیں وہی گول بازار میں جگہ جگہ پر تعمیراتی میٹریل ذخیرہ کرنے کی وجہ سے بھی نالیاں بند ہوئی ہیں ۔ گول بازار جو گریف کے حوالے ہے ہسپتال سے لے کر پولیس ہیڈ کوارٹر تک سڑک کی نالی مکمل طور پر جام ہو چکی ہے اورتعمیراتی میٹریل کے ساتھ ساتھ گندگی کے ڈھیر نالیوں میں پڑے ہوئے ہیں ۔وہیں گول سلبلہ روڈ، گول پرتمولہ روڈ، آئی ٹی آئی روڈ کے علاوہ دوسر ی سڑکوں کی نالیاں نا ہونے کی وجہ سے لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ مقامی لوگوں اور دکانداروں نے کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہاکہ گول بازار میں گریف نے اگر چہ سڑک کا تعمیری کام مکمل کیا لیکن آب نکاس کا کوئی خیال نہیں رکھا گیا ہے اور جگہ جگہ پرتعمیراتی میٹریل اور ملبے کی وجہ سے بارشوں کے دوران سارا پانی سڑک پر آ جاتاہے ۔وہیں پورے بازارکی نالی میں پانی کی سپلائی وائی پائپ لائنیں بھی ہیں ۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ گول سلبلہ ، گول پرتمولہ ، آئی ٹی آئی روڈ وغیرہ سڑکوں پرکسی بھی مقام پر نالیاں ٹھیک نہیں ہیں اور یہ تمام سڑکیں محکمہ تعمیرات عامہ کے تحت آتی ہیں ، بارشوں کے دوران لوگوں کی زرعی اراضی اور رہائشی کالونیوں میں پانی جاتا ہے جس وجہ سے لوگوں کے رہائشی مکانات کوبھی نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے ۔لوگوں نے ایک بار پھر انتظامیہ اور محکمہ واعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ جلداز جلد سڑکوں کی حالت اور نالیوں کی حالت کو بہتر بنایا جائے تا کہ بازار کے ساتھ ساتھ دوسری جگہوں پرلوگوں کوپریشانیوں کاسامنا نہ کرنا پڑے ۔