تھنہ منڈی میں تحفظ قرآن کانفرنس کا انعقاد

 تھنہ منڈی //تھنہ منڈی کے سوڑا پل علاقے میںتحفظ قرآن کانفرنس کا انعقاد کیا گیا  جس میں کثیر تعداد میں عاشقان رسولؐ نے موئے مبارک کے دیدار کا شرف حاصل کیاجبکہ کئی نعت خوانوں نے رسول پاک ﷺ کے حضور گلہائے عقیدت پیش کئے۔سوڑا پل علاقے میں حافظ ریاض شبیری کے گھر صوفی ریاض محمودی اور محمد عرفان قادری کی معاونت سے منعقدہ کانفرنس کے دوران محمد عرفان بھٹی قادری نے بتایا کے قرآن پاک میں تابوت سکینہ کا ذکر ہے کہ اس کے وسیلے سے بنی اسرائیل کی دعائیں قبول ہوتیں اور انہیں دشمنوں کے بڑے سے بڑے لشکر پر فتح مبین ملتی تھی لیکن جب قوم عمالقہ نے اس مقدس صندوق کی بے حرمتی کی تو انکے پانچ شہر ویران ہو گے۔ اس سے پتہ چلا کہ اگر اللہ والوں کے استعمال کئے گے تبرکات کی اتنی اہمیت ہے تو نبیوں کے سرداررسول پاک ﷺکی طرف منسوب انکے جسم مبارک کے جز موئے مبارک کی کتنی فضیلت ہوگی۔ ان تبرکات کے وسیلے سے کی جانے والی دعائیں قبول ہوتی تھیں تو اللہ والوں کے وسیلے سے کی جانے والی دعا کیوں قبول نہ ہوں گی۔ انہوں نے واضح کیا کہ اگر تابوت سکینہ کی ادبی سے اگر قوم عمالقہ پر عذاب نازل ہوا تھا تو یقیناً قرآن پاک کی بے ادبی کرنے والے بھی ضرور ہلاک و برباد ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت جلد از جلد مسلمانوں کے جزبات کو مجروح کرنے والے شر پسند عناصر کو پھانسی کے تختے پر لٹکائے ورنہ ہم ایسے عناصر کے خلاف دنیا کا سب سے بڑا پر امن احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔