تنخواہوںسے محروم آنگن واڑی ورکروں کا کپوارہ میں زور دار احتجاج

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ میںسماجی بہبود محکمہ میں تعینات آنگن واڑی ورکرو ں نے زوردار احتجاج کرتے ہوئے اپنی رکی پڑی تنخواہیں واگزار کرنے کا مطالبہ کیا ۔آنگن واڑی ورکرس ایسوسی ایشن کی ضلع صدر رفیقہ خانم نے کہا کہ انتظامیہ آنگن واڑی ورکرو ں سے ہر طرح کا سرکاری کام لے رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی ناگہانی آفت کے دوران آنگن واڑی ورکرپیش پیش رہتے ہیں جبکہ کورونا وائرس میں بھی وہ اپنی خدمات بخوبی انجام دیتی ہیں اور اپنی جانو ں کو خطرہ میں ڈال کر کام کرتی ہیںاور آج تک کئی ورکر اس وبا ء سے جا ں بحق ہوگئے لیکن اس کے باجود بھی ان سے سوتیلی ما ں کا سلوک کیا جاتاہے ۔انہوں نے مزیدکہا کہ 2018میں ان کی تنخواہ کے دو مہینے اور 2019میں 3مہینے جبکہ ستمبر2021سے وہ مکمل اپنی تنخواہو ں سے محروم ہیں جس کی وجہ سے انہیں مالی دشواریو ں کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔احتجاج میں شامل دیگر ورکرو ں نے کہا کہ مہنگائی کے اس دور میں ان کی تنخواہ بہت کم ہے لیکن اس کو بھی وقت پر واگزار نہیں کیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ سینیارٹی لسٹ کو بھی آج تک منظر عام پر نہیں لایا گیا جس کے باعث وہ سخت پریشان ہیں ۔انہو ں نے مزید کہا کہ ملک کی دیگر ریاستو ں میں کام کر رہی آنگن واڑی ورکرو ں کی ماہانہ اجرت کافی زیادہ ہے لیکن جموں و کشمیر وہ واحد خطہ ہے جہا ں آنگن واڑی ورکروں کو کم تنخواہ دی جاتی ہے ۔انہو ں نے مطالبہ کیا کہ ملک کی دیگر ریاستو ں میں تعینات آنگن واڑی وکرو ں کی طرح انہیں بھی تنخواہ دی جائے ۔انہو ں نے ایل جی انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ مداخلت کر کے آنگن واڑی ورکرو ں کے مطالبات فوری طور حل کریں ۔