ترکی اورامارات کے مابین 13معاہدوں پر دستخط

جدہ//متحدہ عرب امارات اور ترکی نے ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان اور صدر رجب طیب ایردوآن کی ملاقات کے موقع پر دفاع اور تجارت سمیت مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کے فروغ سے متعلق 13سمجھوتوں اور معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔ دونوں ملکوں کے حکام نے دفاع، صحت، ماحولیاتی تبدیلی، صنعت، ٹیکنالوجی، ثقافت، زراعت، تجارت، معیشت، امورنوجواناں، نقل وحمل، آفات کا انتظام، موسمیات، مواصلات اور آرکائیو کے شعبوں میں دوطرفہ تعاون اور روابط کے فروغ کے لیے مفاہمت کی یادداشتوں اور سمجھوتوں پر دست خط کیے ہیں۔ترک صدر رجب طیب ایردوآن 2013 کے بعد متحدہ عرب امارات کے اپنے پہلے دوروزہ دورے پر پیرکو ابوظبی پہنچے تھے۔انھوں نے ترکی سے اڑان بھرنے سے قبل اس امید کا اظہار کیا کہ ان کے دورے سے دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تجارت کو فروغ ملیگا۔یواے ای کی سرکاری خبر رساں ایجنسی وام کی رپورٹ کے مطابق ابوظبی کے صدارتی محل قصرالوطن میں دونوں رہ نماؤں کے درمیان ملاقات ہوئی ہے اور انھوں نے دوطرفہ تعلقات اور علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر ہونے والی پیش رفت کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔دونوں رہ نماؤں نے اس بات پر زوردیا کہ ترکی اور یو اے ای خطے میں سلامتی اور استحکام کو مضبوط بنانے اور درپیش بحرانوں کے پْرامن حل کی کوششوں کی حمایت کے حوالے سے ایک جیسا وڑن رکھتے ہیں۔ابوظبی کے ولی عہد نے کہا کہ تین ماہ قبل ان کے ترکی کے دورے کے موقع پردونوں ممالک کے درمیان طے پانے والے معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں نے دوطرفہ اقتصادی اور تجارتی شراکت داری کو بحال کرنے اور فروغ دینے کی اساس فراہم کی تھی۔