ترال ناگہ سڑک کے منظور شدہ منصوبے میں ردبدل کہلیل سے ناگہ بل تک سڑک کے 2کلومیٹر تعمیر ہی نہیں کئے گئے

سید اعجاز

ترال//سب ضلع ترال کے کہلیل سے ناگہ بل نامی گائوں تک دو کلو میٹر رابط سڑک انتہائی خستہ حال ہے، جس کی وجہ سے علاقے میں لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں ۔ سرکار نے دو سال قبل ایک نوٹس نکالی ، جس کے مطابق ترال سے ناگہ بل تک7کلو میٹر لمبی سڑک کو پی ایم جی ایس وائی اسکیم کے تحت تعمیر کرنے کاا علان کیا گیا ۔مقامی لوگوں نے بتایا اس اعلان کے ساتھ ہی مقامی آبادی نے خوشی کا اظہار کیا۔تاہم لوگوں کی خوشی اس وقت مایوسی میں تبدیل ہوئی جب علاقے میں مذکورہ محکمے نے منصوبے میں تبدیلی کرتے ہوئے آخری2کلو میٹر کے بجائے نیچے یعنی بس اسٹینڈ ترال سے شیر آباد کے مقام تک سڑک پرمیکڈم بچھایاجس پر پہلے ہی تارکول بچھایا ہواتھا، جس کی وجہ سے سڑک کے انتہائی خستہ حال2کلو میٹر خستہ حال ہی رہے، جس کی وجہ سے ماحچھامہ ،باگندر ،زاری ہاڈ،برن پتھری ،پیر تکیہ ،کنگہ لورہ اور آڈہ پتھری کے لوگوں کو انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں ۔علاقے کے لوگوں نے بتایا کہ محکمہ نے جن دو کلو میٹروں کوتعمیر کیا ہے، وہ پہلے ہی بہتر حالت میں تھے ۔لوگوںنے سڑک کی فوری تعمیر کا مطالبہ کیا ہے اور مطالبہ کیا ہے اگر فوری طور ایسا ممکن نہیں ہے تو کم سے کم سڑک پرپیچنگ کی جائے تاکہ لوگوں کو چلنے پھرنے میں پریشانیوں کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔ادھر ذرائع نے بتایا محکمہ پی ایم جی ایس وائی کی جانب سے 2کلو میٹراس وجہ سے کٹ گئے کیوںکہ تکنکی ٹیم نے انہیں رد کیا تھا جس کی وجہ سے2کلو میٹر قصبے میں تعمیر کرنے پڑے تاہم مذکورہ دیہات کے لوگوں نے بیان کو مسترد کیا ہے ۔