ترال میں سکھ نوجوانوں کی ہلاکت قابل مذمت :گورودوارہ پربندھک کمیٹی

پونچھ//ڈسٹرکٹ گرودوارہ پربندھک کمیٹی اور سول سوسائٹی پونچھ نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں پلوامہ کے ترال میں سکھ نوجوانوں کی ہلاکت پر سخت رنج و غم کا اظہار کیا۔اس دوران  مقررین نے کہا کہ کشمیر میں نوجوانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ اس دوران گردوارہ پربندھک کمیٹی کے صدر سردار نریندر سنگھ نے کہا کہ کشمیر میں سکھ اقلیتی طبقے کو دانستہ طورپرنشانہ بناکر انہیں ڈرایا دھمکایا جاناباعث تشویش اورقابل مذمت ہے۔ انہوں نے انتظامیہ سے اپیل کی کہ سکھوں کو کشمیر اور دیگر علاقہ جات میں تحفظ فراہم کیا جائے۔ انہوں نے ریاستی گورنر سے پرزور مطالبہ کیا کہ سکھ نوجوان کی ہلاکت کی تحقیقات کروائی جائے اورملوثین کیخلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ سکھ نوجوان کو صرف اس وجہ سے مارا گیا ہے کہ وہ الیکشن میں شامل ہوا تھا۔اس دوران مولانا سعید حبیب، سناتن دھرم صبا کے صدر ستیش ساسن ،کانگریس کے سینئر لیڈر تاج میر، ایڈوکیٹ راجندر سنگھ ،ایڈووکیٹ محمد زمان نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر سردار سرجن سنگھ نے بھی سخت غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے انتظامیہ سے اپیل کی کہ اقلیتوں کو تحفظ فراہم کیا جائے۔ ان لوگوں کا کہنا تھا کہ ریاست جموں و کشمیر کے حالات بد سے بد تر ہوتے جا رہے ہیں اس لیے انتظامیہ کو اس سلسلہ میں کڑے اقدامات اٹھا کر یہاں کے حالات کو بہتر کرنا ہوگا۔