ترال میں حادثاتی دھماکہ، جنگجوجاں بحق، لاش عید گاہ میں پائی گئی،قصبے میں ہڑتال

 ترال //ترال علاقے میں جیش محمد سے وابستہ جنگجوحادثاتی دھماکے میں جاں بحق ہوا جس کی لاش کو سنیچر کی صبح پولیس نے عید گاہ ترال میںبر آمد کیا ۔ اس دوران قصبے میں تعزیتی ہڑتال کی وجہ سے معمولات زند گی بری طرح متاثر رہی ۔جنوبی کشمیر کے قصبہ ترال میں سنیچر کی صبح ترال پائین میں عید گاہ کے اندر کمبل میں لپیٹی ایک لاش دیکھی گئی ہے جس کے بعد آبادی نے  فوری طورپولیس کو مطلع کیا ۔ پولیس کی ایک ٹیم موقعے پر پہنچ گئی اور لاش کو اپنی تحویل میں لیا ۔ پولیس  نے بتایا کہ لاش کو اپنے تحویل میں لینے کے دوران ایک خط بھی ملا ہے جس پر لکھا تھا کہ’ ’یہ لاش نہ کوئی مخبر ہے اور نہ کوئی سیول ہے بلکہ یہ بھائی مجاہد ہے جو ہائیڈ آوٹ کے باہر مائن بلاسٹ میں شہید ہوا ، اور مذکورہ جاںبحق جنگجوں پاکستان کا رہنے والا ہے جس کی شناخت عمر بھائی عرف حسن ہے اس لئے اسکو سپرد خاک کیا جائے‘‘۔پولیس نے لاش تحویل میں لیکر بعد میںغالباً بارہمولہ میں غیر ملکی جنگجوئوں کے لئے موجود قبرستان میں سپرد خاک کیا ۔ اس دوران ڈائریکٹر جنرل پولیس ایس پی وید نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ہندورہ آری پل ترال کے نزدیک کمین گاہ میں ایک غیر ملکی جنگجو بارودی سرنگ بنانے کے دوران دھماکہ ہونے کے باعث جاں بحق ہوا جس کی لاش پولیس نے ترال میں بر آمد کی ہے ‘‘۔اسی دوران قصبے میںتعزیتی ہڑتال کی وجہ سے معمولات زند گی بری طرح متاثر رہی ۔ سڑکوں سے ٹرانسپورٹ غائب رہنے کے علاوہ سرکاری دفاتر میںملازمین کی حاضری نہ ہونے کے برابر رہی جبکہ تمام کار باری ادارے بند رہے ۔