ترال میں ایس آر ٹی سی گاڑیاں اور منی بس سروس شروع کرنے کا مطالبہ

ترال//ترال کی تقریباًسبھی رابطہ سڑکوں پرمنی بسوں یا بڑی مسافر گاڑیوں کی عدم دستیابی کے نتیجے میں مسافر وں کو ذہنی کوفت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔اگر چہ لوگوں کی ایک بڑی تعداد سومو گاڑیوںمیں سفر کرتی ہے تاہم غریب طبقہ کیلئے روزانہ ایسا ممکن نہیں ہے ۔طالب علموں کا کہنا ہے کہ وہ سومو کرایہ ادا کرنے کی حالت میں نہیں ہیں۔کئی طالب علموں نے بتایا کہ جس غریب باپ کے3بچے ترال یا دوسرے کسی علاقے میں زیر تعلیم ہیں وہ کس طرح اتنا خرچہ برداشت کرے گا۔انہوںنے بتایاکہ بس سروس نہ ہونے کے نتیجے میں انہیں زیادہ کرایہ ادا کرنا پڑتا ہے جو اُن کیلئے کسی بوجھ سے کم نہیں۔انہوں نے بتایا کہ ایک ماہ کا جو سفر وہ بس یا منی بس میں 360 روپئے پر کرتے ہیں وہی اب900روپے میں طے کرنا پڑتا ہے۔انہوںنے سرکار سے مطالبہ کیا کہ علاقے میں دن کے اہم اوقات یعنی صبح اور شام کو سکول اور کالجوں میں زیر تعلیم بچوں کو آنے جانے کے لئے ایس آر ٹی سی بس سروس چالو کی جائے۔