ترال معرکہ آرائی: خاکستر مکان کے ملبے سے ابھی کچھ نہیں ملا

سرینگر/جنوبی کشمیر کے ترال علاقے میں سنیچر کو فورسز نے جنگجوﺅں کے ساتھ معرکہ آرائی کے دوران جس رہائشی مکان کو خاکستر میں تبدیل کیا، بسیار تلاشی کے باوجود اس کے ملبے سے ابھی تک کسی جنگجو کی لاش بر آمد نہیں ہوئی ہے۔

ذرائع کے مطابق آری پل نامی گاﺅں میں  فورسز کا تلاشی آپریشن جاری ہے تاہم کئی گھنٹے گذرنے کے باوجود ابھی تک مکان کے ملبے سے کسی جنگجو کی لاش نہیں ملی ہے۔

 علاقے میں آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی کارروائی جاری تھی۔

اس سے قبل آری پل کے آس پاس واقع پستونہ، سیر، گلشن پورہ، لوراﺅ اور ہانڈورہ نامی گاﺅں سے ہزاروں مظاہرین نے معرکہ آرائی کی جگہ کی طرف مارچ کی کوشش کی ۔

یہ احتجاجی مارچ ان افواہوں کے بعد شروع ہوا کہ آری پل میں حزب المجاہدین کا مقامی کمانڈر، حماد خان فورسز کے ساتھ معرکہ میں جاں بحق ہوا ہے۔

ذرائع نے کہا کہ فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ہوا میں گولیاں چلائیں۔

حکام نے کہا کہ آری پل آپریشن جاری ہے جو علاقے میں جنگجوﺅں کی موجودگی کی اطلاع کے بعد آج صبح شروع کیا گیا۔

عینی شاہدین نے کہا کہ آری پل میں بعد دوپہر فورسز کے ہاتھوں ایک رہاشی مکان کو نذر آتش کرنے کے بعد فائرنگ رک گئی جس کے بعد تلاشی کارروائی کا آغاز ہوگیا۔

انہوں نے کہا کہ بظاہر جنگجو اُسی مکان کے اندر مورچہ زن تھے جس کو نذر آتش کیا گیا ہے۔