تحریک حریت کی طرف سے خانقاہ معلی سے احتجاجی جلوس برآمد

 سرینگر//تحریک حریت نے کل بعد نماز جمعہ خانقاہ معلی سرینگر سے ایک احتجاجی جلوس برآمد کیا جس میں لوگوں کی ایک بھاری تعداد نے شرکت کرکے ریاستی انتظامیہ کے خلاف پُر زور احتجاج کیا۔ احتجاجی جلوس جس کی قیادت صدر ضلع سرینگر محمد رفیق اویسی کررہے تھے ،نے اس موقع پر انتظامیہ کی شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مزاحمتی قیادت کی آواز کو دبانے کیلئے حکمران پولیس اور فورسزکا استعمال کررہے ہیں ۔انہوں نے اسلام آباد میں مجوزہ عوامی جلسہ ناکام بنانے کے لیے گرفتاریاں عمل میں لانے، قائدین کے گھروں پر چھاپے ڈالنے ،رکاوٹیں اور قدغن عائد کرنے اور کرفیو کے نفاز کو حکام کی شکست قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایک جانب یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ مزاحتی قیادت عوامی حمایت سے محروم ہے اور دوسری طرف اپنے اس سفید جھوٹ اور اپنی خفت و شکست کے احساس کو فتح میں تبدیل کرنے کے لئے فوج کشی کی جارہی ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ پی ڈی پی نے فریب کاری اور ظلم و ستم کے سبھی ریکارڑ توڑ کر اس بات کا بین ثبوت پیش کیا کہ ''خیالات کی جنگ ''کا ان کا دعویٰ نہ صرف ایک فریب ہے بلکہ اصل میں یہ ٹولہ لوگوں کے خلاف زور آزمائی میں ہی یقین رکھتا ہے۔