تاجروں کا وفد ڈپٹی کمشنراور برگیڈ کمانڈر سے ملاقی

پونچھ//پونچھ راولاکوٹ ٹریڈرس ایسوسی ایشن چکاں دا باغ پونچھ کے تاجروں کا ایک وفد زیر قیادت صدر ایسوسی ایشن عبدالرزاق خاکی برگیڈ کمانڈر93انفینٹری برگیڈ پونچھ اے پی پنڈارکراور ڈپٹی کمشنر پونچھ سے ملاقی ہوا۔فوجی افسر سے ملاقات کے دوران تاجروں نے ایک تحریری یاداشت پیش کی۔اس موقعہ پر موجودسردار کرشن سنگھ، امتیاز احمد سلاریہ اور دیگر عہدیداران برگیڈ کمانڈر کو بتایا کہ پونچھ راولاکوٹ تجارت کے بند ہونے کی وجہ سے انہیںسخت نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ پچھلے تین ماہ سے تجارت بند ہونے کی وجہ سے دونوں طرف کے تاجروں کو نقصان ہو رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھی جنگ بندی کی خلاف ورزی کے دوران ہند فوج اور پاکستانی رینجرس کے درمیان گولہ باری ہوتی رہی ہے لیکن اس کا اثر تجارت اور بس سروس پر کبھی نہیں پڑا لیکن اس بار بلاوجہ اس تجارت کو اور آر پار بس سروس کو بند کر دیا گیا ہے۔تاجروں نے اس بات کا بھی ذکر کیا کہ مظفرآبا اڑی کے راستے تجارت اور راہ ملن بس جاری ہے اورصرف پونچھ راولاکوٹ تجارت اور بس سروس کو بند کیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بس سروس کے بند ہونے کی وجہ سے برسوں کے بچھڑے ہوئے رشتہ داروں کا رابطہ ایک بار پھر منقطع ہو گیا ہے اور دونوں طرف کے تاجر جن میں اکثریت بے روزگار نوجوانوں کی ہے ،کے منہ سے نوالا چھین لیا گیا ہے۔انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ پونچھ راولاکوٹ تجارت کو سوچی سمجھی سازش کے تحت بند کئے جانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر ایسا نہیں ہے تو پورے ہفتہ حدِ متارکہ پر امن رہتا ہے سنیچر اور اتوار کو ہی کیوں گولہ باری ہوتی ہے۔برگیڈ کمانڈر نے تمام تاجروں کو بغور سننے کے بعد انہیں یقین دلایا کہ وہ اس سلسلہ میں اعلیٰ سطح پر بات کر کے تجارت کو دوبارہ شروع کرو ائیں گے۔بعد از آں وفد ضلع ترقیاتی کمشنر سے بھی ملاقی ہوا اور انہیں بھی تحریری یاداشت پیش کی جس کو پڑ ھ کر طارق احمد زرگر نے تاجروں کو یقین دلایا کہ وہ کوشش کریں گے کہ جلد ازجلد راہ ملن بس اور آر پار تجارت بحال ہو۔