بیک ٹو ولیج پروگرام پر سوال اٹھنے لگے | فقیر گوجر ی میں ڈیڑھ کلو میٹر سڑک کی تعمیر کیلئے منظور فنڈس نہیں ملے | اپنی مدد آپ کے تحت جمع 4لاکھ روپے بھی کام نہ آئے ، سڑک کا کام ہنوز تشنہ تکمیل

سرینگر // حکومت کے بیک ٹو ولیج پروگرام پر شہر کے فقیر گوجر ی سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے ساتھ پہلے مرحلے کے دوران جو وعدے کئے گئے تھے ان کو ابھی تک پورا نہیں کیا گیا ہے اور یہاں کی آبادی حکام سے نالاں ہے ۔ مقامی لوگوں کے ایک وفد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ بیک ٹو ولیج پروگرام کے پہلے مرحلے کے دوران انہوں نے حکام سے مطالبہ کیا تھا کہ شیح بران سے ناگی ناڑ کھٹانہ محلہ کیلئے ڈیڑھ کلو میٹر سڑک تعمیر کی جائے تاکہ یہاں کے لوگ آج کے اس جدید دور میں سڑک رابطہ سے مستفید ہو سکیں ،تاہم اس سڑک کی تعمیر کیلئے منظور ہوئی رقومات میں سے ایک پیسہ بھی سڑک کی تعمیر کیلئے فراہم نہیں کیا گیا ہے ۔حنیف احمد نامی ایک شہری نے بتایا کہ ڈیڑھ کلو میٹر سڑک کی تعمیر نہ ہونے کے نتیجے میں اڑھائی سو گھرانوں پر مشتمل 1000کے قریب آبادی کو مشکلات کا سامنا ہے اور یہاں کے لوگ سڑک کی عدم دستیابی کے نتیجے میں آج بھی اشیائے ضروریا کاندھوں پر اٹھا کر گھروں تک پہنچاتے ہیں اور اگر کوئی بیمار ہو جاتا ہے تو اس کو بھی چار پائی پر اٹھا کر ہسپتال تک لے جانا پڑتا ہے ۔حنیف نے مزید کہا کہ حکام نے بیک ٹو ولیج پروگرام اول کے دوران لوگوں کی مانگ کے بعد سڑک کی تعمیر کیلئے 65لاکھ روپے کا منصوبہ بنایا تھا ،تاکہ یہ ڈیڑھ کلو میٹر سڑک تعمیر ہو سکے ،لیکن اس پیسے کیلئے مقامی لوگوں نے متعدد بار ڈی سی آفس سمیت دیگر محکموں کے چکر کاٹے لیکن یہ پیسہ واگزار نہیں کیا گیا جس کے بعد مقامی لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت 4لاکھ روپے جمع کر کے سڑک کی تعمیر شروع کی۔حنیف کے مطابق سڑک کی تعمیر کے دوران ان کی مدد محکمہ دیہی ترقی نے بھی کی جس کے تحت سڑک کے کناروں پر بنڈ وغیر تعمیر کئے گئے ۔ حنیف نے مزید کہا کہ سڑک کی تعمیر کیلئے نریگا سکیم کے تحت فراہم کیا گیا پیسہ، اور لوگوں کی جانب سے جمع کیا گیا پیسہ سڑک کی مکمل تعمیر میں مدد گار ثابت نہیں ہو سکا ۔ اس کا کہنا تھا کہ مقامی لوگوں نے مال مویشی فروخت کر کے 4لاکھ روپے جمع کئے تھے لیکن یہ سارا پیسہ خرچ ہونے کے باوجود بھی ناگی ناڑ ، دتر پتھری ، گنائی محلہ ، کھٹانہ محلہ ، وغیر دیہات سڑک جیسے سہولیات سے فیضاب نہیں ہو سکے ۔شہریوں کا کہنا تھا کہ بیک ٹو ولیج سوم بھی شروع ہو چکا ہے لیکن جو وعدے پہلے مرحلے میں عوام کے ساتھ کئے گئے تھے ،حکام ان کو بھی عملانے میں ناکام رہی ہے ۔فقیر گوجری کے لوگوں نے مزید بتایا کہ اگر سرکار اس سڑک پر دھیان دے گئی تو مقامی لوگوں کو اس سے فائدہ ہو گا ۔انہوں نے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ سڑک کی تعمیر کے حوالے سے اقدامات کئے جائیں، تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔