بیلہ چنڈک میں عوامی احتجاج،قومی شاہراہ کا تعمیری کام بند کر دیا تعمیر سے قبل زمینوں کے مالکان کو معاوضہ دینے کا مطالبہ،ایل جی کی مداخلت طلب

حسین محتشم
پونچھ//سرحدی ضلع پونچھ کے چنڈک کے بیلہ علاقہ میں جاری قومی شاہراہ کے تعمیراتی کام کو اس وقت مقامی شہریوں نے بند کر دیا جب انہوں نے الزام لگایا کہ ان کو ابھی تک معاوضہ نہیں ملا ہے اور نہ ہی اس کے متعلق ان سے بات کی گئی ہے۔شہریوں کی جانب سے چنڈک کے بیلہ میں اس سلسلہ میں ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں زمینوں کے مالکان زن و مرد اوربچے سب شامل تھے۔ مظاہرین نے الزام لگایا کہ جو سروے کیا گیا تھا اس کے مطابق سڑک نہیں نکالی جا رہی ہے۔احتجاجی مظاہرے کی قیادت کر رہے لیڈران نے کہا کہ قومی شاہرا یقیناً علاقہ کی ترقی کا باعث بنے گی لیکن اس سے قبل جن غریب زمینداروں کی زمینیں سڑک کی تعمیر میں آرہی ہیں ان کو معاوضہ ملنا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ اگر انتظامیہ چاہے تو وہ ان کو زمینوں کے بدلے دوسری جگہ زمین دے انہیں وہ منظور ہے۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ ان کی تھوڑی تھوڑی زمین ہے اگر ان سے وہ چھین لی جائیں گی تو وہ کہاں جائیں گے ،وہ اپنے بال بچوںکی پرورش کیسے کریں گے۔انہوں نے تشویش کا اظہار کیا کہ متعلقہ محکمہ کی جانب سے زمینداروں کو دھوکہ دیا جا رہا ہے۔ شاہین احمد نامی مقامی شخص کا کہنا تھا کہ ضلع ترقیاتی کمشنر نہایت ہی اچھے انسان ہیں اور وہ عوام کی ہر ممکن مدد کرنا چاہتے ہیں لیکن متعلقہ محکمہ کے ملازمین کی جانب سے لاپرواہی برتی جا رہی ہے کیونکہ وہ کاغذی کام نہیں کرنا چاہتے اس لیے وہ غریبوں کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔انہوں نے انتباہ دیا کہ جب تک ان کے مطالبات پورے نہیں کیے جائیں گے اور ان کے ساتھ پورا انصاف نہیں ہوگا وہ احتجاجی مظاہرے اور دھرنے جاری رکھیں گے،اور سڑک کا کام بالکل نہیں کرنے دیں گے۔انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اس سلسلہ میں مداخلت کر کے ان کو انصاف دلانے کی اپیل کی۔