بیرونی ریاستوں میں خریف کی فصل کیلئے نسبتاً زیادہ اراضی کااستعمال | کشمیر میں دھان کی بوائی کیلئے مخصوص زمینیں سکڑنے لگیں،پیداوار میں کمی

Kashmiri Muslim villagers thrash paddy after a harvest in Mirgund Central Kashmir on Wednesday October 3 2018 PHOTO BY BILAL BAHADUR

عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر//وزارت زراعت کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ہندوستان میں کسانوں نے اس سال اب تک 979.88 لاکھ ہیکٹر پر خریف کی فصل بوئی ہے، جو کہ گزشتہ سال کی اسی مدت میں 972.58 لاکھ ہیکٹر پر تھی ۔یہ سالانہ بنیادوں پر، بوائی تقریباً 1 فیصد زیادہ ہے۔تاہم وادی کشمیر میں اس سیزن کیلئے بوائی کااحاطہ سکڑ رہا ہے ۔مرکزی وزارت زراعت نے خریف کی فصلوں کے تئیں کسانوں کی رغبت کے حوالے سے اعداد وشمار جاری کئے ہیں جن کی رو سے ہندوستان میں خریف کی فصل دھان کی کاشت کے رقبے میں اضافہ ہواہے۔اعداد وشمار کے مطابق اجناس کے لحاظ سے، دھان کی بوائی 328.22 لاکھ ہیکٹر پر ہے، جو کہ گزشتہ سال کی اسی مدت میں 312.80 لاکھ ہیکٹر تھی۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ، ہندوستان نے جولائی میں چاول کی برآمد کے اصولوں میں ترمیم کرتے ہوئے غیر باسمتی سفید چاول، ایک اہم برآمدی شے کو’’ممنوعہ‘‘ زمرے میں ڈال دیا۔تاہم یہاں پر کشمیر جہاں دھان کی زیادہ کاشت ہوتی تھی ،اس کا رقبہ اب سکڑتے ہوئے محض127000ہیکٹر تک آگیا ہے اور لازمی طور سے یہاں پر چاول کی پیداوار بھی تیزی سے گھٹ رہی ہے اعداد شمار کے مطابق دیگر ریاستوں میں تاہم ارہر، اْڑد، مونگ اور کلتھی پر مشتمل دالوں کے لیے بوائی سال بہ سال کم ہے۔ وزارت زراعت کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اس خریف میں اب تک کل دالوں کی بوائی 113.07 لاکھ ہیکٹر ہے، جو کہ گزشتہ سال 122.77 لاکھ ہیکٹر تھی۔مزید برآں، مونگ پھلی، سویا بین، سورج مکھی، تل اور دیگر کی بوائی بھی 184.61 لاکھ ہیکٹر کے مقابلے میں 183.33 لاکھ ہیکٹر پر معمولی طور پر کم رہی۔گنے کے کاشتکاروں نے اب تک 56.06 لاکھ ہیکٹر میں فصلوں کی بوائی کی ہے، جو کہ گزشتہ سال 55.20 لاکھ ہیکٹر کے مقابلے میں، اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے۔ہندوستان میں فصل کے تین موسم ہوتے ہیں – موسم گرما، خریف اور ربیع۔وہ فصلیں جو اکتوبر اور نومبر کے دوران بوئی جاتی ہیں اور جو پیداوار جنوری سے مارچ تک پختگی پر منحصر ہوتی ہے ربیع ہے۔ جون۔جولائی کے دوران بوئی جانے والی اور مون سون کی بارشوں پر منحصر فصلیں اکتوبر۔نومبر میں کاٹی جاتی ہیں خریف ہیں۔ ربیع اور خریف کے درمیان پیدا ہونے والی فصلیں موسم گرما کی فصلیں ہیں۔