بیت الخلائوں کی تعمیر میں گھپلہ | خزانہ عامرہ کو38لاکھ روپے کا چونا لگا

سرینگر//اینٹی کورپشن بیورونے سرینگر میونسپل کارپوریشن کے انجینئروں اورغیرسرکاری تنظیم میسرزسوشل ویلفیئرآف انڈیاکے عہدیداروں کے خلاف ایک کیس درج کرکے جموں اور سرینگر میں چھاپے مارے۔ایک بیان کے مطابق میسرزسوشل ویلفیئرانڈیا  اورسرینگر میونسپل کارپوریشن کے حکام کے خلاف سوچھ بھارت مہم اسکیم کے تحت بیت الخلائوں کی تعمیرمیں دھوکہ دہی،گھپلے اور عوامی رقومات کی خردبرد کے الزامات کی تحقیقات کے دوران اینٹی کورپشن بیورو نے اچانک مشترکہ جانچ کی۔ اس دوران مشترکہ جانچ کے دورا ن پایا گیا کہ 218گھروں میں بیت الخلاء 17490روپے کی لاگت سے فی بیت الخلاء تعمیر کرنے اور9دوسٹوریج گڑھے 12000روپے کی لاگت سے کھودنے کا معاہدہ مذکورہ غیرسرکاری تنظیم کے ساتھ طے پایا تھا۔اس غیرسرکاری تنظیم نے کام مکمل کرنے کے دستاویزات معہ مستفیدین کی فہرست کے داخل کئے ،جس کے بعد میونسپل کارپوریشن کے کمشنر نے اس کی تصدیق میونسپل کارپوریشن کی انجینئرنگ  ونگ ،جس میں اُس وقت کے ایگزیکیٹوانجینئر،جونیئرانجینئرشامل تھے،سے کرائی اورانہوں نے میونسپل کارپوریشن کے کمشنر کو رپورٹ پیش کی جس میں کہاگیاتھا کہ مذکورہ بیت الخلاء اور سٹوریج گڑھے ضابطوں کے تحت تعمیر کئے گئے ہیں جس کے بعدمذکورہ غیرسرکاری تنظیم کے حق میں 3881612روپے کی رقم واگزار کی گئی۔ اینٹی کورپشن بیوروکی مشترکہ جانچ کے دوران تاہم پایا گیا کہ مذکورہ غیرسرکاری تنظیم نے ایک بھی بیت الخلاء تعمیر نہیں کیاتھااور میونسپل کارپوریشن کی انجینئرنگ ونگ نے غلط تصدیق رپورٹ اعلیٰ حکام کو پیش کی ،جس کی بناء پر مذکورہ غیرسرکاری تنظیم کے حق میں،اُن کاموں جنہیں کبھی عمل میں لایا ہی نہیں گیا ،کیلئے بھاری رقم واگزار کی گئی ۔بیان کے مطابق کارپوریشن کے حکام نے غیرسرکاری تنظیم کے ساتھ ملی بھگت کرکے اپنے فائدے کیلئے عہدے کا ناجائزفائدہ اُٹھا کرغلط رپورٹ پیش کی جس کی وجہ سے خزانہ عامرہ کو بھاری نقصان پہنچایا گیا۔ اس سلسلے میں اینٹی کورپشن بیوروسری نگر شاخ نے کارپوریشن کے حکام جن میں اُسوقت کے ایگزیکیٹوانجینئر،جونیئرانجینئر اور مذکورہ غیرسرکاری تنظیم کے عہدیداروں ، ڈائریکٹر سوشل ویلفیئرآف انڈیااور جنرل سیکریٹری میسرزسوشل ویلفیئرآف انڈیا کے خلاف کیس زیرایف آئی آر نمبر12/2020تحت دفعہ5(1),(C),5(1)(D),5(2)پی سی ایکٹ اورآر پی سی120درج کیا۔ سنیچرکو عدالتی احکامات کی تعمیل میں مذکورہ بالا ملزموں کی رہائش گاہوں پر چھاپے مارے گئے اور وہاں سے قابل اعتراض مواد اور دستاویزات برآمد کرکے  ضبط کئے گئے۔کیس کی تحقیقات جاری ہے ۔