بھٹناگرکا فِش فارمنگ پروجیکٹ کوکر ناگ کا معائینہ ماہی پالن میں جدید ٹیکنالوجی اَپنانا لازمی

عظمیٰ نیوز سروس

اننت ناگ/لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر نیاتوار کوفِش فارمنگ پروجیکٹ کو کر ناگ کا دورہ کیا اور اِس کے کام کاج کا جائزہ لیا۔ بھٹناگر کے ہمراہ ڈائریکٹر فشریز محمد فاروق ڈار ، چیف پروجیکٹ آفیسر غلام محی الدین وانی اور محکمہ کے دیگر اَفسران بھی تھے۔مشیر موصوف نے دورے کے دوران فارم کے مختلف ڈویژنوں کا معائینہ کیا اور فارم میں ٹرائوٹ کے بیج، فیڈ اور بروڈسٹاک کا جائزہ لیا۔اُنہوں نے اِس موقعہ پر اَفسران کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے ماہی پروری شعبے میں نوجوانوں کے لئے ماہی پالن میں جدید ٹیکنالوجی کے اقدام سے روزگار کے مزید مواقع پیدا کرنے پر زور دیا۔اُنہوں نے نقصانات کو کم کرنے کے لئے پوسٹ ہارویسٹ مینجمنٹ پر بھی زور دیا۔مشیر موصوف نے کہا کہ فِش فارمنگ حکومت کی معاشی نمو کو تیز کرنے اور جموںوکشمیر کے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے اَقدامات کا ایک اہم جز ہے ۔

اُنہوں نے پروجیکٹ کے اِنتظام کی حوصلہ اَفزائی کی کہ وہ مچھلی فارمنگ کی جدید ٹیکنالوجی اور طریقوں کو تلاش کریں جو پیداوار اور منافع میں اِضافہ کرسکیں۔ بھٹناگر نے دیر پا اور ماحولیاتی طورپر ذمہ دار ماہی پروری کے طریقوں کی اہمیت پر بھی زور دیا۔اُنہوں نے صارفین کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کر نے کے لئے مچھلی کی پیداوار میں اِضافہ کرتے ہوئے خطے کے ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔دورے کے دوران ڈائریکٹر فشریز نے مشیر موصوف کو جانکاری دی کہ یہ منصوبہ ایشیا کا سب سے بڑا ٹرائوٹ فارم ہے ۔اُنہوں نے مشیر کو فارم کے مختلف آپریشنز اور کام کے بارے میں آگاہ کیا۔ڈائریکٹر فشریز نے بتایا کہ ٹرائوٹ کے بیجوں کی پیداوار 36فیصد بڑھ کر 14.05 لاکھ تک پہنچ گئی ہے جبکہ گزشتہ برس کے دوران 10.32لاکھ کی پیداوار ریکارڈ کی گئی تھی۔ اُنہوں نے مشیر کو بتایا کہ معیاری ٹرائوٹ بیج جموں و کشمیر میں سرکاری اور نجی شعبے کے اِکائیوں او ردیگر ریاستوں جیسے سکم ، تامل ناڈو ، ہماچل پردیش اور لداخ کو بھی فراہم کیا جارہا ہے۔