بھدرواہ ۔بسوہلی سڑک پرٹریفک بحال

 بھدرواہ//بھدرواہ ۔بسوہلی شاہراہ پر 10 دنوں کے بعد گاڑیوں کی آمد و رفت بحال ،جو کہ مقامی لوگوں کی جانب سے رہائشی علاقہ میں سڑکوں پر تار کول بچھناے کے معاملہ کو لیکر احتجاج کی وجہ سے گاڑیوں کی آمد و رفت کے لئے بند ہو گئی تھی۔یہ شاہراہ گُذشتہ 10سال سے خستہ حالی کی شکار ہوئی تھی۔روزنامہ میں اس سڑک کی خستہ حالی پر ایک رپورٹ شائع ہوئی تھی جس پر کاروائی کرتے ہوئے انتظامیہ اور بی آر او کے درمیان اس سڑک پر تار کول بچھانے پر اتفاق ہوا ہے جسکی وہ سے مقامی لوگوں نے اپنا دس روزہ احتجاج موخر کیا ہے۔اس شاہراہ پر ہر سو گرد و غبار و گڑھے بنے ہوئے تھے جسکی وجہ سے مقامی لوگوں کی زندگی اجیرن بن گئی تھی۔ اب بی آر او اور انتظامیہ نے اس مطالبہ کی اہمیت کے مد نظر مقامی لوگوں کو یقین دلایا کہ اس شاہراہ پر جلد ہی تار کول بچھا یا جائے گا۔ایگزیکٹو مجسٹریٹ بھدرواہ معصود احمد نے مقامی لوگوں کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ یقینی طور سے یہ ایک جائز مسئلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے بی آر او کے چیف انجینئر سے یہ مسلہ اُٹھایا ہے ا ور 114 ۔آر سی سی کو ہدایت دی ہے کہ اس سڑک پر تار کول بچھانے کا عمل فوری طور شروع کیا جائے ۔دریں اثنا بی آر او کو یہ بھی ہدایت دی گئی ہے کہ اس سڑک پر دن میں تین مرتبہ پانی کا چھڑکائو کیا جائے تاکہ مقامی لوگوں کو گرد و غبار سے نجات ملے۔اُنہوں نے اس سڑک پر ٹریفک بحال کرنے میں مدد کرنے پر مقامی لوگوں کا شکریہ ادا کیا جنھوں نے ہڑتال ختم کرنے میں معتبری دکھائی ۔اُنہوں نے کہا کہ بھدرواہ میں پہلی بار سیاحوں کا بھاری رش دیکھا جا رہا ہے ،اس لئے ہم سیاحوں کو یہاں لوگوں کی جانب سے سڑکوں پر روکاوٹیں کھڑی کرکے ٹریفک میں رخنہ ڈالنے کی وجہ سے کوئی خراب شبہیہ پیش کرنے کا کوئی موقعہ فراہم نہیں کریں گے ۔مقامی لوگوں نے کہا کہ ہم نے انتظامیہ کی یقین دہانی کے بعد اپنا احتجاج ایک ماہ کے لئے معطل کیا ہے ۔ایک دیہاتی فاروق احمد ٹھوکر نے کہا کہ ہم نے بھدرواہ میں سیاحتی سیزن کے مد نظر اپنا احتجاج ایک ماہ کے لئے معطل کیا ہے نہ کہ منسوخ ۔اور اگر ہمارے مطالبات کو تسلیم نہیں کیا گیا تو ہم دوبارہ اپنا احتجاج شرودع کریں گے۔